02:02 pm
چائے ، پانی اور پیزا

چائے ، پانی اور پیزا

02:02 pm

چائے، پانی اور پاپا جونز کے پیزوں کی دھوم مچی ہوئی ہے، ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخا ر پنڈی کی طرف آنے پر مولانا فضل الرحمن اور پی ڈی ایم کے دیگر راہنمائوں کو چائے پانی پلانا چاہتے ہیں جبکہ ’’مولانا‘‘ پاپا جونز کے پیزے بھی ساتھ ہی کھاناچاہتے ہیں تو اس میں غلط کیا ہے؟ ایک دوسرے کو کھانے، ’’پلانے‘‘ اور دوستوں میں تحفے، تحائف تقسیم کرنے سے  آپس میں محبت اور پیار بڑھتا ہے’’پلانے‘‘ سے میری مراد چائے، پانی ہی ہے، تاکیداً یہ بات اس لئے لکھنا پڑی کہ ’’پلانے‘‘ سے کوئی غلط مطلب نہ نکال لے، ویسے ’’مولانا‘‘ کو چائے، پانی کے ساتھ ’’آب زم زم‘‘ پینے کا بھی یقینا شوق ہوگا، وہ بھی اگر کوئی پیش کرنا چاہے تو اس سے انکار کفران نعمت سمجھا جائے گا، وہ عناصر کہ جو جرنیلوں اور عسکری اداروں سے ڈراتے  رہتے ہیں کہ خبردار … ادھر کوئی گیا تو وہ ماریں گے ، گرفتار کرکے جیلوں میں ڈالیں گے، یہ کریںگے، وہ کریں گے ، ان مخصوص عناصر کے ان ساری ڈرونی باتوں پر میجر  جنرل بابر افتخار کے اس پیار بھرے جملے نے  خاک ڈال دی کہ اگر پی ڈی ایم والے پنڈی آئے تو چائے پانی پلائیں گے  لیکن یہاں جان کی امان ملے تو عرض کئے دیتا ہوں کہ کبھی وزیراعظم عمران خان بھی بڑے طمطراق سے اعلان کیا کرتے تھے کہ جسے دھرنا دینے کا شوق ہو وہ اسلام آباد آئے   تو ان کی طرف سے کنٹینر اور کھانا پیش کیا جائے گا  نجانے ان کا یہ اعلان اب تک برقرار ہے یا پھر وہ اس سے بھی یوٹرن لے چکے ہیں، اگر خدانخواستہ پی ڈی ایم والے چائے، پانی اور پیزہ کھانے پنڈی کی طرف چل پڑے تو  پھر سچ بتائیے گا ، ماریں گے تو نہیں؟
بہرحال سیاست میں یہ ہلکی پھلکی باتیں حس مزاح کی تسکین تک ہی محدود  رہیں تو بھلی لگتی ہیں  اس لئے کہ پاک فوج ہو یا پی ڈی ایم والے یہ سب اس دھرتی ہی کے بیٹے ہیں ، یہ سب پاکستانی ہیں اور ان سب کو پاکستان سے پیار ہے ،پاک فوج کے بانکے سجیلے جوان تو روز ملکی سرحدات کی پہریداری کے فرائض سرانجام دیتے ہوئے شہادتوں کے جام نوش کرتے ہیں… جی ہاں ’’شہادت‘‘ ’’پیرومرشد‘‘ کہا کرتے تھے کہ ’’شہادت‘‘ شہد سے میٹھا اور لذیذ موضوع ہے ، اسی لئے تو خاتم الانبیاءﷺ نے ارشاد فرمایا ہے کہ شہید کے خون کا قطرہ زمین پر گرنے سے پہلے … آسمان کا رب اس کے کبیرہ، صغیرہ گناہ معاف فرما دیتا ہے … قرآن پاک میں اللہ پاک نے ’’شہید‘‘ کو ’’مردہ‘‘ کہنے پر پابندی لگا رکھی ہے،ملکی سرحدات کو اپنے جوانوں کے لہو سے سیراب کرنے والی پاک فوج پر ملک کا ایک ایک بچہ فخر کرتا ہے  اور میں ذاتی طور پر جانتا ہوں کہ مولانا فضل الرحمن  بھی نہ صرف اس پاک فوج کا دل سے احترام کرتے ہیں بلکہ گزشتہ سال ہی ان کی جماعت نے ان کے حکم پر پاک فوج سے اظہار یکجہتی کا دن بھی منایا تھا۔
گزشتہ سال آزادی مارچ کے موقع پر سابق ڈی جی آئی ایس پی آر مولانا فضل الرحمن کی حب الوطنی کو ہر قسم کے شک و شبہ سے بالاتر قرار دے چکے ہیں، نجانے وزیراعظم عمران خان اور ان کے وزراء کی فوج ظفر موج کو کس  ’’حکیم‘‘ نے اطلاع دی کہ پی ڈی ایم والے غدار ہیں پی ڈی ایم  والے  انڈین اور اسرائیلی ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں، حکمرانوں کاکام غداری کے سرٹیفکیٹ بانٹنا نہیں ہوتا بلکہ اگر کوئی غدار ہو تو اس  کے عدالت کے سامنے ثبوت پیش کرکے اسے قرا ر واقعی سزا دلوانا ہوتا ہے، کیا یہ حیرت کی بات نہیں ہے کہ وزیراعظم اور وفاقی وزراء کا بیانیہ جس پی ڈی ایم کے حوالے سے یہ ہے کہ یہ غدا  ر ہیں، یہ انڈیا اور اسرائیل کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں۔ یہ فوج اور حکومت کے خلاف سازش کررہے ہیں، اسی پی ڈی ایم کے حوالے سے جب آئی ایس پی آر کے ترجمان سے سوال کیا جاتا ہے تو وہ بڑے نرم  انداز میں جواب دیتے ہیں کہ ’’پی ڈی ایم والے پنڈی آئے تو چائے پانی پلائیں گے‘‘ اس کا واضح مطلب ہے کہ ’’ادارہ‘‘ پی ڈی ایم والوں کو غدا ر نہیں سمجھتا، عمران خان وزیراعظم بننے کے بعد بھی اگر نفرت کے گھوڑے سے نیچے  اتر کر اپوزیشن کے ساتھ مل بیٹھتے تو آج یقینا حالات مختلف ہوتے ، یاد رہے کہ اپوزیشن سے مراد وہ سیاست دان ہیں کہ جن پر نہ  تو کوئی کرپشن کا الزام ہے اور نہ ثبوت، جارج ڈبلیو بش کا یہ کروسیڈی اصول کہ جو دہشت گردو ں کے خلاف جنگ میں امریکہ کا ساتھ نہیں دے گا اس کا دوسرا مطلب یہ کہ  وہ دہشت گردوں کا ساتھی ہوگا، یہاں بھی اپنالیا گیا، یعنی جو عمران خان کا ساتھی یا حکومت کا حامی نہیں ہوگا دراصل وہ کرپٹ ہوگا، اس ’’اصول‘‘ کو بنیاد بناکر سیاست میں نفرت بھرے نعروں کا زہر گھولا گیا، پگڑیاں اچھالی گئیں … میڈیا ٹرائل کیا گیا، اس سے بڑا ظالم کون ہوگا کہ جو فوج کے ادار ے کو متنازعہ بنانے کی کوشش کرے گا؟ غلطیاں حکمرانوں سے بھی ہوتی ہیں، غلطیوں سے مبراء جرنیل بھی نہیں ہیں ، فوج  ایک خالص پروفیشنل ادار ہ ہے ، اسے نہ سیاست میں مداخلت کرنی چاہیے اور نہ ہی کسی شخص کو اسے جان بوجھ کر سیاست میں گھسیٹنا چاہیے، پرویز مشرف جیسے ڈکٹیٹروں نے اس ادارے کو بدنام کرنے کی جو کوشش کی تو جوانوں نے  اپنے لہو کا خراج دے کر اس مقدس ادارے کو نہ صرف مضبوط کیا بلکہ اس کی حرمت پر حرف بھی نہ آنے دیا۔
سیاست دان ہوں، حکمران ہوں، اسٹیبلشمنٹ ہو یا میڈیا ہم سب کو بحیثیت قوم ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھنے کی ضرورت ہے، آج پاکستان جس خوفناک معاشی اور سیاسی بحران کا شکار  ہے اس سے پہلے شائد یہی اس ملک پر اتنا برا وقت آیا ہو، عوام یہ بات بڑی شدت سے محسوس کررہے ہیں … حکمران مہنگائی کو عروج بخش کر ان کے منہ سے روٹی کا نوالہ چھیننے کی کوشش کررہے ہیںجنہوں نے عوام کیلئے امید کی کرن بننا ہے، اگر وہ آپس میں ہی دست و گریبان رہیں گے تو پھر ملک و قوم کاکیا بنے گا؟

 

تازہ ترین خبریں

میر پور میں شادی کی تقریب غم میں تبدیل ، کرنٹ لگنے سے 3 افراد جاں بحق

میر پور میں شادی کی تقریب غم میں تبدیل ، کرنٹ لگنے سے 3 افراد جاں بحق

28جنوری کی شب چاند خانہ کعبہ کے عین اوپر ہوگا

28جنوری کی شب چاند خانہ کعبہ کے عین اوپر ہوگا

مظفر گڑھ میں خواجہ سرائوں نے پریس کلب کھول لیا

مظفر گڑھ میں خواجہ سرائوں نے پریس کلب کھول لیا

چنیوٹ میں خون سفید ہوگیا ۔۔۔ سفاک شوہر نے بیوی اور 7 ماہ کی بچی کو موت کے گھاٹ اتار دیا

چنیوٹ میں خون سفید ہوگیا ۔۔۔ سفاک شوہر نے بیوی اور 7 ماہ کی بچی کو موت کے گھاٹ اتار دیا

خواجہ سرا کو مرد پولیس اہلکار گرفتار نہیں کر سکے گا

خواجہ سرا کو مرد پولیس اہلکار گرفتار نہیں کر سکے گا

شمالی وزیرستان میں مارے جانے والے دہشت گرد چار قبائلی عمائدین سمیت غیرملکی  انجنیئرز کے قتل میں ملوث تھے ۔ائی ایس پی آر

شمالی وزیرستان میں مارے جانے والے دہشت گرد چار قبائلی عمائدین سمیت غیرملکی  انجنیئرز کے قتل میں ملوث تھے ۔ائی ایس پی آر

سیکورٹی فورسز کا شمالی وزیرستان کے علاقے میر علی میں خفیہ آپریشن ، 5 دہشت گرد مارے گئے

سیکورٹی فورسز کا شمالی وزیرستان کے علاقے میر علی میں خفیہ آپریشن ، 5 دہشت گرد مارے گئے

پنجاب حکومت نے 185ارب روپے مالیت کی زمین قبضے سے چھڑوا لی

پنجاب حکومت نے 185ارب روپے مالیت کی زمین قبضے سے چھڑوا لی

پی ٹی آئی ق لیگ کو ایک سیٹ دینے پر آمادہ

پی ٹی آئی ق لیگ کو ایک سیٹ دینے پر آمادہ

بڑی مچھلیوں کیخلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں شوگر اور گندم اسکینڈل کی تحقیقات منطقی انجام تک پہنچائیں گے ، چیئرمین نیب

بڑی مچھلیوں کیخلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں شوگر اور گندم اسکینڈل کی تحقیقات منطقی انجام تک پہنچائیں گے ، چیئرمین نیب

سیف اللہ کھوکھر کو نوازشریف اور شہبازشریف سے وفاداری کی سزا دی جارہی ہے۔ مریم اورنگزیب

سیف اللہ کھوکھر کو نوازشریف اور شہبازشریف سے وفاداری کی سزا دی جارہی ہے۔ مریم اورنگزیب

پاکستان میں سب سے بڑے شیطان کا نام مولانا فضل الرحمان ہے، اللہ پاکستان کو اس شیطان سے محفوظ رکھیں ۔ غلام سرور خان

پاکستان میں سب سے بڑے شیطان کا نام مولانا فضل الرحمان ہے، اللہ پاکستان کو اس شیطان سے محفوظ رکھیں ۔ غلام سرور خان

ان ہاوس تبدیلی، تحریک عدم اعتماد کا معاملہ ، پاکستان مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس کل طلب

ان ہاوس تبدیلی، تحریک عدم اعتماد کا معاملہ ، پاکستان مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس کل طلب

سیاحتی شعبے کی بہتری کے لیے برینڈ پاکستان لانچ کریں گے۔ زلفی بخاری

سیاحتی شعبے کی بہتری کے لیے برینڈ پاکستان لانچ کریں گے۔ زلفی بخاری