02:01 pm
بھان متی کا کنبہ‘ رنگ میں بھنگ

بھان متی کا کنبہ‘ رنگ میں بھنگ

02:01 pm

نا م نہاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کو اگر بھان متی کے کنبے سے تعبیر کیاجائے تو غلط نہیں ہوگا۔ کیونکہ ان کا ’’اتحاد  ملک اور عوام کے مفاد میں نہیں ہے اور نہ ہی ان کا ایجنڈا ملک کی ترقی کا آئینہ دار ہے۔ بلکہ یہ ایک بھارتی ایجنڈ ا ہے جس پر یہ لوگ گامزن ہیں۔ لندن میں مجر م و بھگوڑا نوازشریف مسلم لیگ(ن) کے کارکنوں کوکھل کر پاکستان کے اور عسکری اداروں کے خلاف بھڑکارہاہے۔ تاکہ ملک میں انارکی پھیل جائے۔مولانا فضل الرحمن کو مسلم لیگ(ن) اور پی پی پی دونوں استعمال کررہے ہیں۔ جیسا کہ گزشتہ سال مولانا کو اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ‘ کے لئے استعمال کیا تھا‘ بعد میں انہیں تنہا چھوڑ دیاتھا‘ جس کا مولانا کو بہت دکھ تھا‘ لیکن پھراچانک مجرم نوازشریف نے اپنی عیارانہ چالوں کے ذریعہ مولانا کو اپنے دام میںپھنسالیا اور انہیں وہ سبز باغ دکھائے کہ مولانا  دوبارہ ان کا ساتھ دینے کیلئے تیار ہوگئے۔ ویسے بھی مولانا کو پبلسٹی کا بہت شوق ہے‘ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے انہیں خاص پبلسٹی ملی ‘ لیکن ان دونوں پارٹیوں نے انہیں اپنا حقیقی رہنما تسلیم نہیں کیا‘ جس وجہ سے اب یہ دونوں ’’ جمہوریت‘‘ اور’’ آئین کی بالادستی‘‘ کے لئے لڑنے والی جماعتیں سینیٹ الیکشن میں حصہ لینے کی تیاری کررہی ہیں حالانکہ ان دونوں جماعتوں نے مولانا اور اپنے کارکنوں کو یہ یقین دلایاتھا کہ مارچ میں ہونے والے سینیٹ الیکشن سے پہلے یہ اسمبلیوں سے اپنااستعفیٰ دے دیں گی۔ بلکہ واشگاف الفاظ میں کہا تھا کہ یہ دونوں شکست خوردہ جماعتیں سینیٹ الیکشن میں حصہ نہیں لیں گی۔ 
 سینیٹ کے انتخابات میں حصہ لینے کے لئے سب سے پہلے پی پی پی نے اعلان کیاتھا‘ اس ضمن میں مولانا صاحب سے مشورہ نہیں کیا بلکہ شنید یہ ہے کہ بلاول بھٹو مولانا کو پسند نہیں کرتے ہیں‘ اس لئے انہوں نے اس اہم مسئلے پر  ان سے مشورہ نہیں کیا۔ حالانکہ یہ طے پایاتھا کہ دونوں پارٹیاں  حکومت مخالف تحریک کے ضمن میں کوئی بھی فیصلہ پی ڈی ایم کی قیادت کے مشورے سے کریں گی۔ لیکن ایسا نہیں ہوا ۔ اب جب پی پی پی نے سینیٹ الیکشن میں حصہ لینے کااعلان کردیا  ہے تومسلم لیگ (ن) نے بھی ایسا ہی قدم اٹھایا ہے‘ اس طرح پی ڈی ایم بنیادی طور پر غیر موثر ہوگئی ہے‘ دونوں پارٹیوں کا یوٹرن اس بات کی گواہی دے رہاہے کہ ان کے ’’ مفادات‘‘ ایک نہیں ہیں‘ بلکہ جدا جداہیں مولانا صاحب اپنی خفت مٹانے کیلئے مسلسل جھوٹ بول رہے ہیں کہ انہیں بعض رہنمائوں کے استعفیٰ مل گئے ہیں حالانکہ پاکستان کے آئین کی روشنی میں استعفیٰ قومی اسمبلی کے اسپیکر کے پاس جمع کرانے ہوتے ہیں۔
تاہم یہاں یہ بات قارئین کو گوش گزار کرنا ضروری ہے کہ مریم صفدر  نے کراچی میں مفتاح اسماعیل کے گھر پرآکر نجی بات چیت میں کہاتھا کہ’’ پی پی پی پر حکومت مخالف تحریک کے سلسلے میں بھروسہ نہیں کیاجاسکتاہے۔ یہ پارٹی اندرون خانہ اسٹیبلشمنٹ سے مل چکی ہے‘‘۔ ہوسکتاہے کہ مریم صفدر کی یہ سوچ درست ہو لیکن پی پی پی مسلم لیگ(ن) کے مقابلے میں پڑھے لکھے اور سمجھدار افراد پر مشتمل ہے‘ اس کے بیشتر راہنمائوں نے مسلم لیگ(ن) کو یہ پیغام دیاہے کہ وہ حکومت کے بعض فیصلوں اور طریقہ کار کے خلاف ضرور ہیں لیکن فوج کے خلاف نہیں ہیںاور نوازشریف کے بیانیہ سے اتفاق نہیں کرتے ہیں‘ کیونکہ یہ بیانیہ سراسر پاکستان دشمن ممالک کا ہے‘ خصوصیت کے ساتھ بھارت اور اسرائیل کا جبکہ ناقابل تردید حقیقت یہ ہے کہ نوازشریف مسلسل فوج کے خلاف غلیظ بیانات دے کر اپنے لئے اور اپنی اولاد کیلئے آئندہ پاکستان کی سیاست میں رستہ بند کررہے ہیں ۔ 
 دوسری طرف خود نوازشریف کے برادر خورد شہباز شریف اور ان کی ا ولاد بھی نوازشریف کے بیانیے کے خلاف ہے۔ بلکہ شہباز شریف نے تو بارہا نوازشریف کو سمجھایا ہے کہ وہ اپنی ذات اور اپنے مفاد کی جنگ پاکستان کی اسٹیبلشمنٹ سے نہ لڑیں‘ یہ طریقہ کار پاکستان اور اس کی سالمیت کے مفاد میں نہیں ہے۔ بلکہ اس طرح دشمن ممالک پاکستان کو معاشی ‘ سیاسی اور معاشرتی طور پر کمزور کرنے میںدیر نہیں کریں گے۔ بلکہ کر رہے ہیں۔ لیکن نوازشریف کے دل میں اونٹ کی طرح دل میں کینہ بسا ہواہے‘ وہ جذباتی طور پر اندر سے ٹوٹ پھوٹ کاشکار ہیں۔ اور ذہنی طور پر کوئی مثبت سیاسی فیصلہ کرنے کے قابل نہیں ہیں‘ وہ فضل الرحمن کی مذہبی حیثیت کو اپنے مفاد میں استعمال کرکے پاکستان میں حالات کوخراب کرنے پر تلے ہوئے ہیں۔ حالانکہ ان کے بعض دوستوں نے مشورہ دیاہے کہ وہ اسے پاکستان کی ملٹری اسٹیبلشمنٹ کے خلاف بیان دینے سے گریز کریں اور ریڈ زون کوکراس نہ کریں۔ تاہم دیکھنا یہ ہے کہ آئندہ مجرم نوازشریف پران پرباتوں کا کیا اثر ہوتاہے۔ اس کی بیٹی مریم صفدر جس کو سیاست کی (الف ب تک نہیں آتی ہے) وہ انا پڑھ غریب عوام کو پاکستان کے مقتدر اداروں کے خلاف مشتعل کررہی ہے وہ دونوں باپ بیٹی نے اپنے متعدد ناقص زہر آلود بیانات کے ذریعہ یہ ثابت کردیاہے کہ ان کا ایجنڈا عمران خان کی حکومت کی کارکردگی نہیں ہے‘بلکہ ملٹری اسٹیلبشمنٹ پر بالادستی ہے تاکہ معاشرے میں ان کی حیثیت ‘رعب ‘دبدبے اور بھارت کے خلاف سیسہ پلائی ہوئی دیوار بنی ہوئی ہے اس کو کمزور کرنا مقصود ہے۔ پاکستان کا باشعور طبقہ اس حقیقت کو سمجھ چکاہے‘ یہی وجہ ہے کہ پی ڈی ایم اب عوام کی نگاہوں میں بے نقاب ہوچکی ہے‘ ان کے اندر ہونے والی ٹوٹ پھوٹ اس بات کی غمازی کررہی ہے کہ یہ سب موروثی سیاست کو قائم رکھنے کیلئے ’’جدوجہد‘‘ کررہے ہیں ان کا اصل ایجنڈا پاکستان کو کمزورکرناہے‘ تاکہ دشمن ممالک کی مدد سے پاکستان پر حکومت کی جائے‘ ان کا یہ منحوس خیال وخواب کبھی پورا نہیں ہوگا۔ اب پاکستان کے عوام ان کرپٹ سیاستدانوں اوران کی اولاد کے لئے نہ تو سڑکوں پر آئیں گے اور نہ کسی قسم کی قربانیاں دیں گے۔ ذرا سوچئے۔
’’ہیں کواکب کچھ‘ نظر آتے ہیں کچھ
دیتے ہیں دھوکہ یہ بازی گر کھلا‘‘
(غالب)

 

تازہ ترین خبریں

نالائقوں نے پاکستان کو نیلام گھر بنا دیا ،مریم اورنگزیب

نالائقوں نے پاکستان کو نیلام گھر بنا دیا ،مریم اورنگزیب

شبلی فراز نے پی ڈی ایم کے ٹکڑے ٹکڑے ہونے کاثبوت دیدیا

شبلی فراز نے پی ڈی ایم کے ٹکڑے ٹکڑے ہونے کاثبوت دیدیا

پی ڈی ایم اختلافات کے باعث شدید کشمکش کا شکار ہے ،وزیرخارجہ

پی ڈی ایم اختلافات کے باعث شدید کشمکش کا شکار ہے ،وزیرخارجہ

اسلام آباد ہائیکورٹ :حکومت نے سوشل میڈیا قواعد پر نظر ثانی کی حامی بھرلی

اسلام آباد ہائیکورٹ :حکومت نے سوشل میڈیا قواعد پر نظر ثانی کی حامی بھرلی

 خیبرپختونخوا میں 73فیصد سروے مکمل کرلیا ، طلبہ کو جلدسکالرشپ دینگے،ثانیہ نشتر

خیبرپختونخوا میں 73فیصد سروے مکمل کرلیا ، طلبہ کو جلدسکالرشپ دینگے،ثانیہ نشتر

سندھ ایپکس کمیٹی کا5ماہ بعد اجلاس ،نیشنل ایکشن پلان پر غور

سندھ ایپکس کمیٹی کا5ماہ بعد اجلاس ،نیشنل ایکشن پلان پر غور

عمران خان ہی 2023تک وزیراعظم ر ہیںگے،گورنرپنجاب

عمران خان ہی 2023تک وزیراعظم ر ہیںگے،گورنرپنجاب

پی ڈی ایم کی وجہ سے لعنت بھیجنے والوں کو آج پارلیمنٹ یادآیا،رانا ثنا اللہ

پی ڈی ایم کی وجہ سے لعنت بھیجنے والوں کو آج پارلیمنٹ یادآیا،رانا ثنا اللہ

مریم نوازآج پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کی صدارت کریں گی

مریم نوازآج پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کی صدارت کریں گی

استعفے یاعدم اعتماد،ہمارا مقصدنااہل حکومت کو گھربھیجنا ہے،قمرزمان کائرہ

استعفے یاعدم اعتماد،ہمارا مقصدنااہل حکومت کو گھربھیجنا ہے،قمرزمان کائرہ

بلاول کابیان ایک رائے،اسے اختلافات نہیں کہا جاسکتا،عظمیٰ بخاری

بلاول کابیان ایک رائے،اسے اختلافات نہیں کہا جاسکتا،عظمیٰ بخاری

ملک بھر میں موسم کیسا رہے گا ؟محکمہ موسمیات نے پیش گوئی کردی

ملک بھر میں موسم کیسا رہے گا ؟محکمہ موسمیات نے پیش گوئی کردی

زرداری نے پی ڈی ایم کو استعمال کرلیا،پیپلزپارٹی اتحاد سے جلد الگ ہوجائیگی،فواد

زرداری نے پی ڈی ایم کو استعمال کرلیا،پیپلزپارٹی اتحاد سے جلد الگ ہوجائیگی،فواد

میر پور میں شادی کی تقریب غم میں تبدیل ، کرنٹ لگنے سے 3 افراد جاں بحق

میر پور میں شادی کی تقریب غم میں تبدیل ، کرنٹ لگنے سے 3 افراد جاں بحق