جمعہ‬‮   22   ‬‮نومبر‬‮   2019

لوئیر دیر، برطرفی کی دھمکی ،ڈاکٹروں ،ملازمین نے استعفے جمع کرنا شروع کر د ئیے

دھمکی سے ڈرنے وا لے نہیں، ڈی ایچ اے ، آر ایچ اے کا بل واپس لیا جائے،مطالبہ

لوئیر دیر (نمائندہ اوصاف )تیمرگرہ لوئر دیر کے ڈاکٹروں نے حکومت کی جانب سے ڈاکٹروں کو برطرف کرنے کاحکم مسترد کر دیا ڈاکٹروں اور محکمہ صحت کے دیگر ملازمین نے استعفے جمع کرنا شروع کر دئے تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے ہسپتالوں کی نجکاری کے فیصلے پر صوبہ بھر کی طرح ڈسٹرکٹ ہیڈ کوار ٹر ہسپتال تیمرگرہ سمیت لوئر دیر کے تمام چھوٹے بڑے ہسپتالوں میں ہڑتال 46واں روز میں داخل ہونے اور حکومت کی جانب سے ہڑتالی ڈاکٹروں اور دیگر سٹاف کی برطرفی کے دھمکی سے صورتحال مزید گھمبیرہو گیا ہے اس حوالے سے ینگ ڈاکٹر ایسوسی ایشن لوئر دیر کے صدر ڈا کٹر رفیع اللہ نے میڈیا کو بتا یا کہ ڈاکٹر برادری حکومت کی برطرفی کی دھمکی سے ڈرنے والی نہیں انھوں نے کہا کہ لوئر دیر کے ڈاکٹروں نے گریننڈ ہیلتھ الا ئینس کے قائدین کی کال پر لبیک کہتے ہوئے ڈاکٹروں اور دیگر طبی عملہ نے اپنی استعفے جمع کرنا شروع کر دئے ہیں جوکہ بعد میں صوبائی قائدین کو بھیج دئے جائینگے انھوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت ڈی ایچ اے ، آر ایچ اے کا بل واپس لیا جائے اور لیڈی ریڈنگ ہسپتالوں میں ڈاکٹروں پر تشددکرنے والے ہسپتال انتظامیہ نوشیر وان برکی اور وزیر صحت کو برطرف کیا جائے ۔
برطرفی دھمکی

© Copyright 2019. All right Reserved