اتوار‬‮   17   ‬‮نومبر‬‮   2019

دیوانی مقدمات میں اصلاحات

ممبران میں جسٹس محمد ابراہیم ، جسٹس عبدالشکور، محمد علی ایڈوکیٹ، ذاکر ترین ایڈوکیٹ اور دیگر شامل
کمیٹی اپنی تجاویز تیار کرنے کے بعد چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ کو پیش کرے گی
پشاور(بیورورپورٹ)خیبر پختون خوا میں دیوانی مقدمات میں اصلاحات اور ان قوانین کو بہتر بنانے کیلئے چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ نے 7 رکنی کمیٹی تشکیل دے دی ہے کمیٹی کے سربراہ پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس روح الامین ہونگے جبکہ دیگر ممبران میں جسٹس محمد ابراہیم خان، جسٹس عبدالشکور، معروف قانوندان اور سپریم کورٹ کے سینئر وکیل محمد علی ایڈوکیٹ، زاکر ترین ایڈوکیٹ، سیشن جج پشاور اور لیگل ڈرافٹ مین پشاور ہائیکورٹ شامل ہیں اس حوالے سے رجسٹرار پشاور ہائیکورٹ کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ میں مذکورہ کمیٹی کی منظوری دی گئی ہے جس میں ان ممبران کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ ایسے تجاویز اور اصلاحات تیار کریں جس سے دیوانی مقدمات کو جلد سے جلد نمٹاجا سکے اور اس قانون میں اصلاحات لا کر عوام کو فوری انصاف کی فراہمی کو یقینی بنا سکے کمیٹی اس حوالے سے اپنی تجاویز تیار کرنے کے بعد چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ کو پیش کرے گی جو منظوری کے بعد صوبائی حکومت کو ارسال کی جائے گی کمیٹی کا اجلاس بہت جلد منعقد کیا جائے گا تاکہ خیبر پختون خوا کے عوام جو کئی عشروں سے اس قانون سے متاثر ہو رہے ہیں کے لئے فوری اور جلد انصاف کی فراہمی کیلئے نئی راہیں تلاش کرکے تجاویز دی جا سکے
کمیٹی تشکیل

© Copyright 2019. All right Reserved