اتوار‬‮   17   ‬‮نومبر‬‮   2019

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پابندیوں کا 96 واں روز، شہری گھروں میں قید


مکمل لاک ڈاؤن ،تعلیمی اداروں پرتالے،برفباری سےبین الاضلاعی سڑکوں اور ہائی وے کارابطہ منقطع
عوام بی جے پی،آر ایس ایس کے غنڈوں سے بچتےہوئے تحریک آزادی آگے بڑھائیں،حریت کانفرنس

سرینگر (مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے جبر اور پابندیوں کا 96 واں روز ، جگہ جگہ بھارتی فوجی تعینات ، نہتے شہری گھروں میں قید ہیں، دنیا سے رابطہ مکمل منقطع ہےکشمیر میں موسم سرما کی پہلی برف باری کے بعد عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو چکا ہے،مریض ادویات کے بغیر مرنے لگے ، جمعہ کو بھی مکمل لاک ڈاؤن رہا ، دکانیں اور کاروباری مراکز بند رہے جبکہ تعلیمی اداروں پر تالے پڑے ہیں ۔ حریت کانفرنس نے کہا ہے کہ کشمیری عوام بی جے پی اور آر ایس ایس کے غنڈوں کی سازشوں سے بچتےہوئے تحریک آزادی کو آگے بڑھائیں۔دریں اثناء مقبوضہ کشمیر میں زبردست برف باری کے باعث 2فوجیوں سمیت کم از کم7افراد ہلاک ہو گئے ہیں ۔سرکاری ذرائع کے مطابق برف باری بد ھ سے شروع ہو کر جمعرات رات تک جاری رہی جس سے علاقے کے زمینی اورفضائی راستے منقطع اوربجلی کا نظام بھی درھم برھم ہو گیا، مقامی حکومت نے کہا ہے کہ گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران ریجن بھر میں ہونے والے حادثات میں برف باری سے 7افراد ہلاک ہو گئے سینکڑوں درخت گر گئے اور بجلی کے کھمبوں کو بھاری برف باری کے باعث نقصان پہنچا، شدید برف باری کے باعث بین الاضلاعی سڑکوں اورعلاقے کی مین ہائی وے کا رابطہ منقطع ہو گیا ،سرکاری حکام کے مطابق سڑکوں کو برف سے صاف کرنے اور گرے ہوئے درخت ہٹانے کیلئے عملہ اور مشینری بھیج دی ہے۔
مقبوضہ کشمیر پابندیاں

© Copyright 2019. All right Reserved