اتوار‬‮   17   ‬‮نومبر‬‮   2019

برنالہ میں گراں فروشی عروج پر،مصنوعی مہنگائی نے عوام کا جینا دوبھر کر دیا


سبزیاں،پھل ،گوشت اور اشیائے خوردو نوش عوام کی پہنچ سے باہر، شلجم،پالک،گوبھی ایک سو روپے کلو میں فروخت
ٹماٹر ایک سو پچاس روپے،مرغی کا گوشت دو سو پچاس سے تین سو روپے کلو ،عوامی حلقوں انتظامیہ سے نوٹس لینے کا مطالبہ
برنالہ (تحصیل رپورٹر ) سب ڈویژن برنالہ کے تمام بازاروں میں گراں فروشی عروج پر،مصنوعی مہنگائی نے عوام کا جینا دوبھر کر دیا۔سبزیاں،پھل ،گوشت اور اشیائے خورد نوش عوام کی پہنچ سے باہر،سبزیوں میں شلجم،پالک،گوبھی اور پالک ایک سو روپے کلو،کریلے،بھنڈی اور مٹر دو سو روپے کلو،ٹماٹر ایک سو پچاس روپے کلو،مرغی کا گوشت دو سو پچاس سے تین سو روپے کلو،بڑا گوشت چار سو پچاس سے پانچ سو روپے کلو،بکرے کا گوشت آٹھ سو روپے سے لے کر نو سو روپے تک فروخت ہو رہا ہے۔اسی طرح پھل بھی زیادہ قیمتوں پر فروخت کئے جا رہے ہیں۔برنالہ کے بازاروں میں مصنوعی مہنگائی نے عوام کا جینا محال کر دیا ہے ۔گروں فروشوں کے خلاف کسی سطح پر کوئی کاروائی نہیں ہوتی۔جس کی وجہ سے اب لوگوں نے انتظامیہ کو بھی شکایات لگانا بند کر دی ہیں کہ انتظامیہ بھی ان گراں فروشی کرنے والے تاجروں کے سامنے بے بس ہے۔بازاروں کے اندر بڑے تھوک کے تاجر وں نے بھی دالوں ،گھی ،اور دیگر اشیائے خورد نو ش کی من مانی قیمتیں لگا رکھی ہیں۔اس مافیا کے سامنے تو انتظامیہ ویسے ہی بے بس ہے۔کسی قسم کی کاروائی کرنے سے گریزاں ہے۔عوامی حلقوں کی طرف سے انتظامیہ سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ ڈھنگ ٹپائو پالیسی سے باہر نکل کر عوام کو ریلیف دینے کے لئے ان گراں فروشوں اور مصنوعی مہنگائی کرنے والے تاجروں کے خلاف بھرپور قانونی کاروائی کریں تا کہ عوام کو ریلیف مل سکے۔انتظامیہ کے افسران اپنے دفاتر سے باہر نکل کر دیکھیں ،عوام کی حالت زار بھی دیکھیں کہ انہیں اندازہ ہو کہ عوام کی حالے کس قدر دگر گوں ہے۔اور مصنوعی مہنگائی کرنے والے تاجروں کو نشان عبرت بنایا جائے۔

© Copyright 2019. All right Reserved