بدھ‬‮   13   ‬‮نومبر‬‮   2019

مظفرآباد، شتہ داروں نے اپنی ہی خواتین پر عرصہ حیات تنگ کر دیا


مظفرآباد،ر شتہ داروں نے اپنی ہی خواتین پر عرصہ حیات تنگ کر دیا
19کنال اراضی پر توڑ پھوڑ اور بوگس ریکارڈ بنا کر ہمیں زمین سے محروم کر دیاگیا، زینی بی بی
مظفرآباد(سٹاف رپورٹر) گائوں بانڈی چہلیاں بیاڑاں میں حقیقی رشتہ داروں نے اپنی ہی خواتین پر عرصہ حیات تنگ کر دیا۔ حلیم،مدا، نور محمد ولد فتو نے 19کنال اراضی پر توڑ پھوڑ اور بوگس ریکارڈ بنا کر ہمیں اپنی بندوبستی زمین سے محروم کر دیا۔ بااثر افراد ہونے کے باعث ہمیں ڈریا دھمکایا جا رہا ہے ۔ نانا اور نانی کی طرف سے ہمارے حصہ میں آنے والی اراضی کے ریکارڈ میں جعل سازی کر کے ہمارے ساتھ ناانصافی کی جا رہی ہے ہم غریب او ر بے سہارا خواتین ہیں ان مردوں کے ساتھ کہاں مقابلہ کر سکتی ہیں وزیراعظم آزادکشمیر ،چیف جسٹس ہائی کورٹ نوٹس لے کر ہمارے ساتھ ہونے ولی زیادتی اور ناانصافی کا ازالہ کرتے ہوئے ہماری ملکیتی اراضی کے ریکارڈ میں توڑ پھوڑ کرنے والوں کیخلاف کارروائی کریں۔ صحافیوں کو تفصیلات بتاتے ہوئے زینی بی بی، بیگی اور کھمی جانی نے کہا کہ میرے والد نے دو شادیاں کر رکھیں تھیں والد کی فوتگی کے بعد ہمارے چچا نے ہماری سوتیلی بہنوں سے اپنے بچوں کی شادیاں کروائیں بعدازاں ہمارے حصہ میں آنے والی زمین پر بھی قبضہ کر لیا ہے ہم خواتین ہیں ہمیں نہ تو محکمہ مال کا علم ہے اور نہ ہی کاغذات تک رسائی ہے فتو ہمارے والد کے بھائی تھے ان کے بیٹوں نے محکمہ مال والوں کے ساتھ مل کر ہماری 4کنال بندوبستی اراضی اوردوسری طرف 15کنال حصہ میں آنے والی اراضی کو جعل سازی سے اپنے نام کروالیا ہے ۔ فتو کے بیٹے حلیم مدا اور نور محمد بہت شاطر اور تیز ہیں ہمیں اندھیرے میں رکھ کر ہماری اراضی کو اپنے نام کروا لیا ہے


© Copyright 2019. All right Reserved