بدھ‬‮   13   ‬‮نومبر‬‮   2019

چوہدری رخسار احمد


جانی ومالی نقصانات کا کوئی مدوا نہیں کر سکتا،حکومت آزاد کشمیر اور پاکستان ریلیف اور بحالی کےلئے اقدامات اٹھا رہی ہے
نقصانات کاجائزہ لینے کے لیے کام کرنے والی ٹیمیوں نے 70 فیصد سروے مکمل کرلیا سروے کا کام مکمل ہوجائے گا
میرپور(نامہ نگار)آزادکشمیرکے وزیرپاورڈویلپمنٹ آرگنائزیشن وممبرکابینہ کمیٹی چوہدری رخسار احمدنے کہا کہ زلزلہ متاثرہ علاقوں میں نقصانات کا جائزہ لینے والی ٹیمیں پوری محنت سے کام کررہی ہیں۔زلزلہ متاثرین کے جانی ومالی نقصانات کا کوئی مدوا نہیں کر سکتا۔حکومت آزاد کشمیر ،حکومت پاکستان ،ایس ڈی ایم اے ،این ڈی ایم اے،پنجاب ،کے پی کے ،سندھ حکومتوں اور این جی اوز کا کردار مثالی رہا۔آئندہ بحالی و آباد کاری کے عمل میں حکومت آزاد کشمیر اپنا بنیادی کردار ادا کرئیگی۔حکومت پنجاب نہر اپر جہلم کی پختہ مرمت کروانے کے بعداس میں پانی چھوڑے۔عارضی مرمت سے اگر نہر کسی جگہ سے ٹوٹ گئی تو بہت تباہی ہوگی۔ متاثرہ علاقوں میں نقصانات کاجائزہ لینے کے لیے کام کرنے والی ٹیمیوں نے 70 فیصد سروے مکمل کرلیا ہے مزید چند دنوں میں سروے کا کام مکمل ہوجائے گا اور اس کے بعد تمام اعداد وشمار سامنے آجائیں گے ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے زلزلہ متاثرین سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ حکومت آزادکشمیر، SDMA,NDMA ،پاک آرمی، این جی اوز نے جس طرح زلزلہ متاثرین کی ریسکیو کے کاموں میں مددکی ہے ،وہ قابل ستائش ہے۔ انھوں نے کہاکہ جن لوگوں کے گھرتباہ ہوگئے ہیں وہ ایک کڑی آزمائش سے گزررہے ہیں۔ متاثرین کے دکھوں کا کوئی مداوا نہیں کیا جاسکتا ۔شہداء زلزلہ کو حکومت آزاد کشمیر اور حکومت پاکستان کی طرف سے پانچ پانچ لاکھ روپے کے امدادی چیک دیئے جا چکے ہیں ۔وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ محمد فاروق حید خانزلزلہ متاثرین کی ہرممکن امداد کرنے کے لئے بھرپور کوششیں کررہے ہیں متاثرین زلزلہ اطمینان رکھیں ان کے مسائل آزاد حکومت حل کرئیگی۔ انھوں نے کہاکہ زلزلہ میں متعددعمارتیں تباہ ہوچکی ہیں جن کوگرانے کے لیے NDMAکو تحریک کی جائے گی اس سلسلہ میں SDMA کے زیراہتمام ایک ہیوی کرین زلزلہ متاثرہ علاقوں میں آرہاہے جس سے بھی اس کام کاآغاز کیا جائے گا ۔
چوہدری رخسار

© Copyright 2019. All right Reserved