بدھ‬‮   23   اکتوبر‬‮   2019

سپریم کورٹ نےچوہدری سعید کیخلاف پٹیشن کو کیسے سنا ؟ وزیراعظم کےتحفظات


کیاکشمیر سپریم کورٹ نے ایکٹ 74آرٹیکل 19کے تحت آزادانہ ٹرائل کیا ہے؟ٹویٹ
بحث شروع ہوگئی ،واقفان حال ٹویٹ کو ایک نئی لڑائی کا پیش خیمہ قرار دینے لگے
خالدابراہیم کیخلاف توہین عدالت کارروائی کے دوران فاروق حیدرنے عدلیہ کی حمایت کی

مظفرآباد( سٹاف رپورٹر) وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدرخان نے چوہدری سعید کیخلاف آنے والے فیصلے پرتحفظات کا اظہار کر دیا۔ راجہ فاروق حیدرخان نے اپنے ٹویٹر پیغام میں کہا کہ آزادکشمیر سپریم کورٹ ایکٹ 1974کے تحت سپریم کورٹ آف پاکستان جیسے اختیارات نہیں رکھتی ،عدالت نے چوہدری محمد سعید کے خلاف پٹیشن کو کیسے سنا ، کیا آزادکشمیر سپریم کورٹ نے ایکٹ 74آرٹیکل 19کے تحت آزادانہ ٹرائل کیا ہے؟ وزیراعظم کے ٹویٹ کے بعد ایک نئی بحث ہوچکی ہے ، واقفان حال اس ٹویٹ کو ایک نئی لڑائی کا پیش خیمہ قرار دے رہے ہیں۔
یاد رہے سابق ممبر اسمبلی سردارخالد ابراہیم مرحوم نے اسمبلی میں تقریر کے بعد توہین عدالت کارروائی کے دوران بارہ مرتبہ ایسے ہی تحفظات کا اظہار کیا تھا کہ آزادکشمیر سپریم کورٹ آف پاکستان سپریم کورٹ کی طرز پر ازخود نوٹس نہیں لے سکتی ۔اس وقت وزیراعظم راجہ فاروق حیدرنے عدلیہ کے موقف کی حمایت کی تھی تاہم چوہدری سعید کی نااہلی کے بعد وزیراعظم کے ٹویٹر بیان نے ایک دلچسپ صورتحال کا آغاز کردیا ہے۔
وزیراعظم ،تحفظات

© Copyright 2019. All right Reserved