جمعہ‬‮   10   اپریل‬‮   2020
 
 

یمن میں بارودی سرنگ پھٹنے سے 4معصوم بچے شہید،2زخمی

واقعہ الحدیدہ میں پیش آیا، شہید اور زخمی بچوں کا تعلق ایک ہی خاندان سے ہے
صنعاء(نیوز ایجنسی)یمن کے مغربی صوبے الحدیدہ میں حوثی ملیشیا کا نصب کیا ہوا دھماکا خیز مواد پھٹنے سے ایک ہی خاندان کے چار بچے جاں بحق اور دو زخمی ہو گئے ۔یہ تمام بچے بہن بھائی ہیں۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ واقعہ الحدیدہ کے ضلع حیس میں وادی نخلہ کے علاقے میں اس وقت پیش آیا جب مذکورہ بچے اپنے گھر کے باہر کھیل رہے تھے۔مقامی ذرائع نے اس اندیشے کا اظہار کیا کہ علاقے میں اسی طرح کے مزید دھماکے ہو سکتے ہیں۔ اس سے قبل موسلا دھار بارشوں کے سبب حوثی ملیشیا کی بچھائی گئی بارودی سرنگوں کا انکشاف ہوا تھا۔یمن کی مشترکہ فورسز کے میڈیا ونگ کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ الجراحی ضلع کے جنوب میں بالخصوص البغیل، بیت الزین، المساجد، القداسی اور العکدہ کے دیہات میں حوثی ملیشیا کی جانب سے بھاری تعداد میں بچھائی گئی بارودی سرنگیں اور نصب کئے گئے دھماکا خیز مواد کا پتہ چلا ہے۔ایرانی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے مغربی ساحل کے علاقے کو دنیا میں بارودی سرنگوں کی سب سے بڑی فیلڈز میں سے ایک بنا دیا۔ شاید ہی کوئی دن ایسا گزرتا ہو جب علاقے کے دیہات، کھیتوں اور عام راستوں میں مقامی لوگ مذکورہ سرنگوں کا نشانہ نہ بنتے ہوں۔ ان میں بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی ہوتی ہے۔
بچے شہید

 
 
© Copyright 2020. All right Reserved