اتوار‬‮   5   جولائی   2020
 
 

جندول، ٹیکسی ڈرائیور کے قاتلوں کی عدم گرفتاری،عوام سراپااحتجاج

کارلفٹروں نے راحت اللہ کوقتل کیا،ملزمان کی گرفتار کیلئےالٹی میٹم دیدیا ،بختیار خان
جندول(نمائندہ اوصاف) لعل قلعہ میدان کے ٹیکسی ڈرائیور راحت اللہ کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف بازار کمبڑ میں عوام نے شٹر ڈائون اور احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے سماجی شخصیت غنچہ گل کی قیادت میں گول مارکیٹ سے لیکر تھانہ لعل قلعہ تک پیدل مارچ کیااور پھر تھانہ لعل قلعہ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا۔اس موقع پر لوگوں نے قاتلوں کی گرفتاری اور مقتول کو انصاف دلانے کے حوالے سے بینرز اور پلے کارڈاٹھا رکھے تھے۔ہزاروں مظاہرین سے لعل قلعہ کے سابق ناظم بختیار خان ،سابق ضلعی کونسلر ملک عبد اللہ شاہ، عنایت اتمانی ،خان شیرین ایڈووکیٹ ،ٹرانسپورٹ کے صدر علی اکبر، سلیم خان و دیگر نے خطاب کیا۔مقررین نے امن و امان کے خراب صورت حال پر تحفظات کااظہار کیا ۔انہوں نے کہا کہ غریب ڈرائیور راحت اللہ ٹیکسی چلا کرحلال روزی کما تا تھااور تین معصوم بچوں کا باپ تھا ۔انہوں نے کہا کہ چارسدہ میں کارلفٹروں نے اسے قتل کر کے گاڑی چھین لی اور فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ۔انہوں نے صوبائی حکومت اور محکمہ پولیس کو چوبیس گھنٹوں کا الٹی میٹم دیتے ہوئے کہا کہ اگر قاتلوں کو گرفتار نہ کیا گیا تو پارلیمنٹ ہائوس کے سامنے احتجاج کرینگے۔
عدم گرفتاری

 
© Copyright 2020. All right Reserved