پیر‬‮   14   اکتوبر‬‮   2019

سوات میں ڈینگی پر قابونہ پایا جاسکا،مزید بیس افراد متاثر( تعداد220ہوگئی )

لاتعدادمتاثرین کا گھروں میں علاج ، 64 خواتین اور تین بچے بھی شامل،مزید18مریض ہسپتال آئے،ترجمان
ڈینگی کے مکمل خاتمے اور روک تھام کیلئے فوری اقدامات اٹھائے جائیں،مقامی افراد، وبا پرتشویش کااظہار
مینگورہ(نمائندہ اوصاف)سوات میں ڈینگی پر قابونہ پایا جاسکا،تعدادبڑھتی جارہی ہے،،متعددافراد میں وائرس کی تصدیق ،220سے زائدافرادڈینگی سے متاثر،لاتعدادمتاثرین کا گھروں میں علاج معالجہ جاری ہے،تفصیلات کے مطابق ضلع سوات میں ڈینگی وائرس سے مزید بیس افراد متاثرہوگئے جس کے بعد متاثرہ افراد کی تعدادبڑھ کر دوسوبیس سے متجاوزکرگئی جن میں 64 خواتین اور تین بچے بھی شامل ہیں، سیدوشریف ہسپتال کے ترجمان کے مطابق گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دورا ن ہسپتال میں مزید 18 مریضوں کو لایا گیا جو ڈینگی وائر س سے متاثرہوئے ہیں ترجمان کے مطابق اب تک سیدوشریف ہسپتال میں 218 مریض لائے گئے ہیں جن میں 64 خواتین اور تین بچے بھی شامل ہیں، 38 مریضوں کا تعلق مینگورہ کے محلہ کو ملوک آباد سے بتایاجاتا ہے، رنگ محلہ سے 25 ،محلہ گنبدمیرہ اور قمبر سے 21,21 مریض لائے گئے، اب تک 188 مریضوں کو علاج کے بعد رخصت کردیا گیا ہے جبکہ تیس مریض تاحال ہسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈمیں زیر علاج ہیں،دوسری جانب مقامی لوگوں نے مریضوں کی بڑھتی تعدادپر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ وائرس کی روک تھام کے حوالے سے حکومت اور محکمہ کی جانب سے دعوے تو بہت سامنے آرہے ہیں مگر اس سلسلے میں تاحال کسی قسم کا عملی اقدام نہیں اٹھایاگیا جو ایک قابل افسوس امر ہے ،انہوں مطالبہ کیا کہ سوات میں ڈینگی کے مکمل خاتمے اور روک تھام کیلئے فوری اور عملی اقدامات اٹھائے جائیں۔

سوات ڈینگی

© Copyright 2019. All right Reserved