منگل‬‮   10   دسمبر‬‮   2019

نیلم، شوہر نے مبینہ طور پر بیوی کو زہر دیدیا


نیلم، ظالم شوہر نے مبینہ طور پر بیوی کو زہر دیدیا
پولیس نے متوفیہ کے خاوند و گرفتار کر کے تفتیش کی تو ندیم نے اقبال جرم کرلیا
نیلم ( بیورورپورٹ) سفاک شوہر نے بیوی کو زہر دے کر دریائے نیلم میں پھینک دیا، پولیس نے مجرم کے خلاف کاروائی کے بجائے وی آئی پی مہمان بنا لیا، قتل پر مٹی ڈالنے کی کوششیں۔ تفصیلات کے مطابق ضلع آٹھمقام کے نواحی علاقہ دنجر کے رہائشی ندیم نے اپنی بیوی زرینہ بی بی کو گھریلو جھگڑے پر تشددکا نشانہ بنایا اور زبردستی زہر دے دی جس کی وجہ متوفیہ کی حالت غیر ہوگئی شوہر ندیم نے بیوی زیرینہ کواٹھا کر ہسپتال لے جانے کے بجائے دریائے نیلم میں پھینک دیا اور پولیس کو گمشدگی کی اطلاعی روپورٹ دے دی۔ متوفیہ کے والد عبدالرحمان اور ورثاء نے قتل کا وقوع ہونے کی شک پر تھانہ پولیس لوات کو متوفیہ کی زندہ یا مردہ برآمد کرنے کی درخواست دی پولیس نے متوفیہ کے خاوند اور سسر کو گرفتار کر کے تفتیش شروع کی تو ملزم ندیم نے اقبال جرم کرتے ہوئے بتایا کہ زرینہ دو بچوں کی ماں تھی اور اس دن روزہ میں تھی کام نہ کرنے پر جھگڑا ہوگیا متوفیہ نے زہر کھا لی حالت خراب ہونے پر اس کو اٹھا کر دریائے نیلم میں پھینک دیا تھا۔ سیاسی اثر رسوخ پر یا چمک کی وجہ سے پولیس نے ملزمان کے خلاف قتل کا 302 دفعہ کے بجائے364اور109دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔ ملزمان ندیم، مجید، اور نوید پولیس کی تحویل میں تھانہ پولیس لوات میں بند ہیں۔ لیکن پولیس سیاسی اثرو رسوخ اور دبائو پر قتل کی تحقیقات کے بجائے گمشدگی کا بتا کر کیس خراب کر رہی ہے۔ ورثاء متوفیہ کی نعش کے لئے دریائے نیلم میں اپنی مدد آپ کے تحت نعش تلاش کر رہے ہیں۔ متوفیہ کے والد عبدالرحمان نے انسپکٹر جنرل پولیس آزاد کشمیر صلاح الدین محسود سے اپیل کی ہے کہ اس کی بیٹی زرینہ کے قتل کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کروائی جائیں اور ملزمان کو کیفر کردار تک پہنچا کر انصاف دیا جائے۔
زہر

© Copyright 2019. All right Reserved