منگل‬‮   10   دسمبر‬‮   2019

محکمہ بہبود آبادی کے 752ملازمین کا مستقبل تاریک


پی پی دور میں وفاق کی طرف سے آزاد حکومت کو بجٹ بھی شفٹ کیا گیا تاہم 8سالوں سے ملازمین مستقل نہ سکے
ناانصافی کا نوٹس لیتے ہوئے غیر جریدہ ملازمین کو مستقل کرنے کا نوٹی فکیشن جاری کریں،وزیراعظم، چیف سیکرٹری سے مطالبہ
مظفرآباد( سٹاف رپورٹر) محکمہ بہبود آبادی کے 752ملازمین کا مستقبل تاریک ہونے کا قومی امکان کابینہ کے ایجنڈے میں شامل ہونے کے باوجود 752ملازمین کے مستقبل کا فیصلہ نہ ہونا حکومتی اراکین کے لیے لمحہ فکریہ ہے ۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ بہبود آبادی کے 752ملازمین ایک عرصہ سے مستقل ہونے کی امید ہی دم توڑنے لگی ہیں پیپلزپارٹی کے دور حکومت میں وفاق کی طرف سے آزاد حکومت کو بجٹ بھی شفٹ کر دیاگیا تھا تاہم 8سالوں سے ان ملازمین کو مستقل نہ کرنا ملازمین کے ساتھ ناانصافی ہے ان میں اکثر ملازمین اپنی سروس بھی پوری کر چکے ہیں لیکن مستقل ہونے کاخواب پورا نہ ہوسکا۔ سول سوسائٹی مظفرآباد نے وزیراعظم اور چیف سیکرٹری سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ محکمہ بہبو د آبادی کے ملازمین کے ساتھ ناانصافی کا نوٹس لیتے ہوئے غیر جریدہ ملازمین کو مستقل کرنے کا نوٹی فکیشن جاری کریں جبکہ جریدہ ملازمین کو بے شک پی ایس کے تحت اشتہار دے کر بھرتی کریں تاہم ان 752ملازمین میں اکثریت خواتین کی ہے وہ 15سے 20سال سروس کر کے اب مستقل نہ ہونے پر کدھر جائیں گی ریاست کی اولین ترجیحات میں شامل ہے کہ وہ ریاست میں بسنے والے افراد کے حقوق کا خیال رکھے بدقسمتی سے یہاں حقوق صلب کرنے کا سلسلہ جاری ہے محکمہ بہبود آبادی کے غیر جریدہ ملازمین کو کس گناہ کی سزاد ی جا رہی ہے 8سالوں سے سرکاری خزانے میں وفاق کی طرف سے دیا جانے والا بجٹ پڑا ہے وہ 752ملازمین کے لیے تاہم بیورو کریسی اس پر عیاشیاں کر رہی ہے
محکمہ بہبود آبادی

© Copyright 2019. All right Reserved