ہفتہ‬‮   19   اکتوبر‬‮   2019

چارکالم۔۔۔۔[[پولیس اصلاحات کاعمل تیز کرنے کاحکم ]] تشدد کے واقعات سےبہت بدنامی ہوئی،ماورائےقانون اقدام برداشت نہیں،عثمان بزدار


چارکالم۔۔۔۔[[پولیس اصلاحات کاعمل تیز کرنے کاحکم ]] تشدد کے واقعات سے بدنامی ہوئی،ماورائےقانون اقدام برداشت نہیں،عثمان بزدار
فرسودہ نظام تبدیل کرکے پولیس کو پبلک فرینڈلی بنائیں گے ،احتساب کانظام مزید موثر بنایا جا رہاہے، جیل مینول بھی بدل رہے ہیں،اجلاس سے خطاب
عاشورپربہترین سکیورٹی انتظامات کئے،وزیراعلیٰ، واقعہ کربلا میں حق پر ڈٹ جانے کاسبق پوشیدہ ، پیغام،داتا گنج بخشؒ کے مزار کوغسل دیا ،راجن پور حادثہ پرافسوس
لاہور(نامہ نگار خصوصی) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت وزیراعلیٰ آفس میں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا، وزیراعلیٰ نے پولیس نظام میں اصلاحات کے عمل کو مزید تیز کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ شہریوں پر تشدد کے واقعات سے بہت بدنامی ہوئی،پولیس کے رویوں میں بہتری لاکرتھانہ کلچر کو تبدیل کرنا ہوگا،پولیس نظام میں اصلاحات وقت کا اہم تقاضا ہے،حوالات میں بند ملزموں سے ماورائے قانون کوئی اقدام اورپولیس تشدد کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا،پولیس کو سائلین کے ساتھ خندہ پیشانی سے پیش آنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب پولیس کو عصرحاضر کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کیا جائے گا،سابق حکومتوں نے پولیس کو سیاسی مقاصد کیلئے استعمال کیا،برسوں سے جاری فرسودہ نظام کو تبدیل کرکے پولیس کو پبلک فرینڈلی بنائیں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت پولیس نظام کو بہتر بنانے کیلئے ہر ضروری اقدام اٹھا رہی ہے،موجودہ خامیوں کو درست کر کےعوام دوست پولیس نظام لائیں گے،تھانہ کلچر میں تبدیلی کیلئے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے منفرد ا قدامات کئے جا رہے ہیں، تھانوں میں کیمروں کے ذریعے حوالات اور تفتیشی عمل کی نگرانی کی جارہی ہے، پولیس کے اندر احتساب کے نظام کو مزید موثر بنایا جا رہاہے اور جیل مینول کو بھی تبدیل کررہے ہیں۔ صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت، چیف سیکرٹری، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب، سیکرٹری قانون اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔دوسری جانب یوم عاشور کے موقع پراپنے پیغام میں وزیراعلیٰ نے کہا کہ کربلا کا واقعہ حق بات پر ڈٹ جانے کا درس دیتا ہے،نواسہ رسول ؐحضرت امام حسینؓ نے جان دے دی، باطل کے سامنے سر نہ جھکایا،واقعہ کربلا میں صبر، ایثار، حق پر ڈٹ جانے کا سبق پوشیدہ ہے،تاریخ میں شہید زندہ رہتے ہیں، ظالم کا نام و نشان مٹ جاتا ہے، ظالم مودی نے مقبوضہ کشمیر میں سفاکیت اور بربریت برپا کر رکھی ہے،مودی جمہوری رہنما نہیں، دور حاضر کا یزید بن چکا ہے، مودی سن لے! اسلام کی تاریخ قربانیوں سے بھری ہے،مقبوضہ کشمیر میں ہزاروں شہید جان کی قربانی دیکر کربلا کی کی عظیم ترین روایت کو نبھا رہے ہیں،شہیدوں کا پاکیزہ لہو رنگ لائے گا اور سفاک مودی کا نام و نشان مٹ جائے گا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ یوم عاشور پر امن وامان کی فضا یقینی بنانے کیلئے ہر ممکن اقدام کیا گیا ہے،مجالس اور جلوسوں کی سکیورٹی کیلئے چار درجاتی حصار بنانے کیلئے ہدایات دی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے عزاداروں کی سہولت اور سکیورٹی کیلئے بہترین اقدامات کئے ہیں،دشمن ملک میں عدم استحکام پیدا کرنے کی سازش کر رہا ہے اور سب نے مل کر دشمن کے مذموم عزائم کو ناکام بنانا ہے،اتحاد، اتفاق اور مذہبی ہم آہنگی کا فروغ وقت کا تقاضاہے۔انہوں نے کہا کہ یوم عاشور پر وضع کردہ سکیورٹی پلان پر 100فیصد عملدرآمدیقینی بنایا جائے گا۔کابینہ کمیٹی برائے امن وامان وضع کردہ پلان پر عملدرآمد کی باقاعدگی سے مانیٹرنگ جاری رکھے۔مجالس اور جلوسوں کے اختتام پذیر ہونے تک پولیس فورس اور متعلقہ عملہ ڈیوٹی پر موجود رہے۔موجودہ حالات میں کوتاہی کی کوئی گنجائش نہیں۔ گزشتہ برسوں سے بڑھ کر سکیورٹی انتظامات کئے گئے ہیں۔ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی برداشت نہیں کی جائے گی۔ فرائص کی ادائیگی میں مصروف پولیس فورس اور دیگر عملے کیلئے کھانے پینے کے بہترین انتظامات ہونے چاہئیں۔وزیراعلیٰ سردار عثمان بزداراوردیگر شخصیات نے حضرت سید علی بن عثمان الہجویریؒ المعروف حضرت داتا گنج بخشؒ کے مزار کو عرق گلاب سے غسل دیا۔ صوبائی وزراء پیر سید سعید الحسن شاہ،میاں اسلم اقبال، سردار آصف نکئی، اجمل چیمہ، مشیر عون چوہدری، معاون خصوصی سید رفاقت علی گیلانی، رکن پنجاب اسمبلی نذیر چوہان،سیکرٹری اوقاف، کمشنر لاہور ڈویژن، سی سی پی او لاہور نے بھی سالانہ غسل مبارک دینے کی تقریب میں شرکت کی ۔ وزیراعلیٰ نے مزار پرپھولوں کی چادر چڑھائی، اس موقع پر ملک کی ترقی و خوشحالی اور استحکام کیلئے دعا کی گئی ۔مقبوضہ کشمیر کے عوام کی بھارتی تسلط سے آزادی کیلئے بھی خصوصی دعا کی گئی۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ حضرت داتا گنج بخشؒ سمیت تمام بزرگان دین نے برصغیر میں امن و آشتی کا درس دیا اور اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ بزرگان دین کے فیوض و برکات سے مقبوضہ کشمیر کو آزادی عطا فرمائیں۔ دریں اثناءوزیراعلیٰ عثمان بزدار نے راجن پور میں ایک ہی خاندان کے 4 افراد کا ٹریفک حادثے میں جاں بحق ہونے کے واقعہ پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ، انہوں نے حادثے کے بارے میں انتظامیہ سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔
وزیراعلیٰ

© Copyright 2019. All right Reserved