ہفتہ‬‮   21   ستمبر‬‮   2019

آج یوم عاشور،ملک بھر میں سخت سکیورٹی،موبائل فون،ڈبل سواری پر پابندی

پاک فوج اوررینجرز کے چاک و چوبند دستے آن کال رہیں گے، جڑواں شہروں اور لاہور میں میٹرو بس سروس معطل رہے گی
کئی مقامات پر جلوسوں کے راستے کنٹینر لگا کر بند ،فضائی نگرانی کا فیصلہ، رضا کار بھی سکیورٹی کے فرائض سرانجام دینگے
اسلام آباد،راولپنڈی(خصوصی نیوز رپورٹر،جنرل رپورٹر، نیوز ایجنسی)دنیا بھر کی طرح آزاد کشمیر اور شمالی علاقہ جات سمیت ملک بھر میں یوم عاشور آج (بروز منگل)روایتی مذہبی عقیدت و احترام سے منایا جائے گا اس موقع پر نواسہ رسول حضرت امام حسین علیہ السلام اور اُنکے 72جانثاروں کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے علم ،ذوالجناح اور تعزیئے کے جلوس برآمد ہوں گے جس میں عزاداران حسین زنجیر زنی ، ماتم داری اور نوحہ خوانی کریں گے جبکہ علماء و ذاکرین واقعہ کربلا اورنواسہ رسول ۖ اور ان کے جانثاروں کی اسلام کیلئے جدوجہد پر روشنی ڈالیں گے یوم عاشور کے موقع پر امن و امان کے قیام کیلئے حکومتی و انتظامی سطح پر تمام انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کے لئے پاک فوج اوررینجرز کے چاک و چوبند دستے آن کال رہیں گے، راولپنڈی، اسلام آباد سمیت بڑے شہروں میں ڈبل سواری پر پابندی کے ساتھ موبائل فون سروس بھی معطل رہے گی اور میٹرو بس سروس بھی بند رہے گی جبکہ جلوسوں کی فضائی نگرانی بھی کی جائیگی اور کئی مقامات پر جلوسوں کے راستے کنٹینر لگا کر بند کر دیئے گئے ہیں، راولپنڈی کی ضلعی و ٹریفک پولیس نے خصوصی سکیورٹی و ٹریفک پلان ترتیب دیئے ہیںجس کے تحت ضلعی پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے6ہزار کے قریب افسران وملازمین اور8ڈی ایس پی، 40 انسپکٹروں ،611وارڈن افسران اور127ٹریفک اسسٹنٹ خصوصی ڈیوٹی دیں گے جبکہ مختار فورس کے رضاکار،مختار سٹوڈنٹس آرگنائزیشن ،مختار آرگنائزیشن ،ابراہیم سکائوٹس اور مختار جنریشن کے رضاکاربھی جلوسوں کے ہمراہ ہوں گے اسی طرح ریسکیو1122اور محکمہ شہری دفاع کے اہلکار بھی الرٹ رہیں گے راولپنڈی میں یوم عاشور کا مرکزی جلوس امام بارگاہ عاشق حسین تیلی محلہ سے برآمد ہو گاقائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی صبح10بجے جلوس کی قیادت کریں گے۔ بعد ازاں امام بارگاہ حفاظت علی شاہ بوہڑ بازار اور امام بارگاہ کرنل مقبول حسین کالج روڈ سمیت شہر بھر سے مختلف جلوس برآمد ہوں گے جو امام بارگاہ حفاظت علی شاہ تیلی محلہ سے برآمد ہونے والے مرکزی جلوس میں شامل ہوں گے اس موقع پر سوگواران امام حسین بوہڑ بازار چوک،حبیب بنک چوک اور ٹرنک بازار چوک میں زنجیر زنی کریں گے جہاں پر مختار سٹوڈنٹس آرگنائزیشن کی جانب سے عزا داری کیمپ لگایا جائے گا جبکہ عزاداروں کی سہولت کے لئے ابراہیم سکائوٹس (اوپن گروپ )میڈیکل کیمپ لگائے گی جہاںپر ڈاکٹر وں کے ہمراہ طبی عملہ ماتم داروں اور زنجیر زنوں کو طبی سہولیات فراہم کرے گا جلوس کے دوران دن2بجے علامہ قمر حیدر زیدی فلسفہ حسینیت پر روشنی ڈالیں گے فوارہ چوک میں زنجیر زنی کے بعد امام بارگاہ شہیدان کربلا ٹائر بازار سے برآمد ہونے والا جلوس مرکزی جلوس میں شامل ہو گااسی طرح دربار شاہ چن چراغ سے برآمد ہونے والا ذوالجناح کا جلوس پرانا قلعہ میں مرکزی جلوس میں شامل ہو گا اس دوران امام بارگاہ یادگار حسین سٹلائیٹ ٹائون اور امام بارگاہ بلتستانیہ انگت پورہ سے برآمد ہونے والے ذوالجناح کے جلوسوں کے شرکا بنی چوک میں زنجیر زنی کریں گے جبکہ مرکزی جلوس جامع مسجد روڈ سے ہوتا ہوا امام بارگاہ قدیمی میں پہنچ کر اختتام پذیر ہو گا جہاں پر شام غریباں برپا ہو گی ادھرسی پی او راولپنڈی فیصل رانا کے مطابق یوم عاشور کے جلوس کے تمام حفاظتی انتظامات مکمل کر لئے گئے ہیں اس موقع پر جلوس کے راستوں کو کنٹینروں اور خار دار تاروں کی مدد سے سیل کیا جائے گاجبکہ مرکزی جلوس کی فضائی نگرانی کی جائے گی جبکہ پاک فوج اور رینجرز کے دستے بھی سیکورٹی ڈیوٹی دیں گے ضلعی پولیس کے ترجمان کے مطابق سی پی او نے ہدائیت کی ہے کہ اہلکارمقررہ وقت سے 1 گھنٹہ پہلے ڈیوٹی مقام پر پہنچ جائیں گے مجاز اتھارٹی کی اجازت کے بغیر کوئی اہلکارڈیوٹی والے مقام کو چھوڑ نہیں سکے گا،متعلقہ ڈویژن کا ایس پی اپنی نگرانی میں پیدل چل کر روٹس کی سرچنگ اور چیکنگ کروائے گامقررہ وقت سے پہلے یا مقررہ وقت کے بعد نکالے گئے جلوس غیرقانونی قرارپائیں گے جنکے منتظمین کیخلاف قانونی کاروائی ہو گی۔ادھر پی ٹی اے کا کہنا ہے کہ ملک کے تمام شہروں کے مخصوص علاقوں میں 9 اور 10 محرم الحرام کو موبائل فون سروس سکیورٹی وجوہات کی بنا پر معطل رہے گی۔ جن علاقوں سے محرم الحرام کے جلوس گزرتے ہیں وہاں صبح سے لے کر شام 6 بجے تک موبائل سروس بند ہوگی۔اس حوالے سے وزارت داخلہ کے ایک سینئر عہدیدار نے بتایا کہ حکومت کی جانب سے نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے۔علاقوں کے نام بتائے بنا ان کا کہنا تھا کہ جلوس میں عزاداروں کی حفاظت یقینی بنانے کے لیے پاکستان کے تمام شہروں کے ان علاقوں میں موبائل فون سروس معطل رہے گی جن کی نشاندہی ضلعی انتظامیہ یا پولیس نے کی ہو۔ اس ضمن میں وزارت داخلہ کی جانب سے موبائل اور انٹرنیٹ سروس کی معطلی کی ہدایات پی ٹی اے کو بھجوادی گئیں جو تمام موبائل آپریٹر کی جانب سے اس پر عملدرآمد کو یقینی بنائے گی۔ دوسری جانب وفاقی دارالحکومت کی انتظامیہ اور پولیس کی جانب سے فراہم کردہ فہرست کے مطابق سیکٹر-6، سیکٹر-7، بلیو ایریا، آئی-10 اور خیابانِ سرسید راوالپنڈی میں پیر کے روز موبائل فون سروس معطل رہی۔
یوم عاشور

© Copyright 2019. All right Reserved