ہفتہ‬‮   21   ستمبر‬‮   2019

حکومت کے خاتمے کیلئے دھرنا، فضل الرحمان نے سیاسی رابطوں کا آغاز کردیا

شیرپائو سے ملاقات،اسفندیار سے رابطہ،بلاول بھٹو، محمود اچکزئی، سراج الحق اور حاصل بزنجو کے ساتھ رابطے کا فیصلہ
نااہل حکمران ہمارے احتجاج کا چند دن بھی مقابلہ نہیں کر سکیں گے،گر فتاریوں سے خوفزدہ ہونیوالے نہیں، کارکنوں سے گفتگو



اسلام آباد( نامہ نگار ) جمعیت علمائے اسلام (ف)کے قائد مولانا فضل الرحمان نے اکتوبر میں اسلام آباد لاک ڈاون دھرنے کے لئے سیاسی رابطوں کا آغاز کرتے ہوئے مسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی اور اے این پی سمیت تمام اپوزیشن جماعتوں کو حکومت مخالف دھرنے میں شرکت کی دعوت دینے کا فیصلہ کیا ہے۔مولانا فضل الرحمان نے شیرپاو سے ملاقات،اسفندیار سے رابطہ کیا، محرم الحرام کے بعد بلاول بھٹو، محمود اچکزئی، سراج الحق اور حاصل بزنجو کے ساتھ رابطے کا فیصلہ کیا ہے جب کہ نواز شریف نے کیپٹن صفدر کے ذریعے مولانا کو دھرنے کی حمایت کا پیغام دیا ہے۔دھرنے کی تاریخ کا اعلان کر نے کے لئے 18 اکتوبر کو مجلس عاملہ کا اجلاس طلب کرلیا ہے، 19 اکتوبر کو مظفرآباد میں جلسہ عام ہوگا۔اسلام آباد دھرنے کے دوران حکومت کے خاتمے، وزیراعظم کے استعفے اور90 دنوں میں نئے انتخابات کے انعقاد کا مطالبہ کیا جائیگا جبکہ حکومت کے خاتمے تک دھرنا جاری رہے گا۔جمعیت علما اسلام نے حکومت کے خلاف فیصلہ کن راونڈ کا آغاز کرتے ہوئے حکومت کے خاتمے تک اسلام آباد میں دھرنا دینے کا اعلان کیاہے جس کے لئے ملک گیر تیاریوں کا سلسلہ جاری ہے ، جے یو آئی (ف) کے مر کزی رکن مولانا امجد خان اور دیگر سے گفتگو کے دوران مولانا فضل الر حمن نے کہا کہ الحمداللہ جے یوآئی (ف) کے پاس عوام کی سب سے بڑی طاقت ہے اور موجودہ حکومت کسی بھی صورت ہماری عوامی طاقت کے سامنے ٹھہر نہیں سکیں گے ان کو ہر صورت گھر جانا ہی پڑ یگا ۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت ناجائز اور نااہل ہے اس لیے اسے رہنے کا کوئی حق نہیں اپوزیشن کی تمام جماعتوں کیساتھ رابطے میں ہیں انشاء اللہ سب اپوزیشن جماعتیں نااہل حکمرانوں کے خلاف متحد ہے اور ان کو کسی بھی صورت مزید برداشت نہیں کیا جائیگا ۔
فضل الرحمان

© Copyright 2019. All right Reserved