ہفتہ‬‮   24   اگست‬‮   2019

کشمیر کیس ہارنے کے بعد افغان امن عمل سبوتاژ کرنیکی کوششیں نقصان دہ ہونگی( میاں افتخار)

کپتان ریت کی بوری اور اصل دشمن اس کے پیچھے چھپا ہے، گڈ اور بیڈ طالبان کے تصورسے دہشتگردی ختم نہیں ہورہی
نازک وقت میں افغان امن عمل کامیاب بنانا ضروری، ہم محب وطن، افغانستان ہمار ے دادا اور پاکستان ہمارا ملک ہے باچا خان کے پیرو کاروں نے حق کا پرچم بلند کرکے جانوں کے نذرانے پیش کئے جو رہتی دنیا تک یاد رکھے جائینگے، خطاب

چارسدہ(تحصیل رپو رٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ ٹرمپ کو خوش کرنے کیلئے حافظ سعید کو گرفتار کیا گیا۔ کپتان ریت کی بوری ہے۔قوم کا اصل دشمن ریت کی بوری کے پیچھے چھپا ہو اہے۔ افغانستان ہمارے دا د ا اور پاکستان باپ کا وطن ہے،مسجد عازی گل بابا چارسدہ میں نماز عید کے بعد شہدائے بابڑہ کی یاد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے میاں افتخار حسین نے کہا کہ پاکستان میں آج بھی گڈ اور بیڈ طالبان کا تصو ر مو جو د ہے یہی وجہ ہے کہ پاکستان سے دہشتگردی ختم نہیں ہورہی،اگر ریاست پاکستان نیشنل ایکشن پلان پر من وعن عمل کرتا تو آج واقعی ہی دہشتگردوں کی کمر ٹوٹ چکی ہوتی،امریکہ کی خواہش پر ایک دن حافظ سعید گرفتار ہوتے ہیں اور دورہ امریکہ سے واپسی پر اس کی رہائی کا ڈھنڈورا پیٹا جاتا ہے میا ں افتخار حسین نے کہا کہ آج کشمیر کا کیس ہارنے کے بعد افغانستان امن عمل کو سبوتاژ کرنے کی کوششیں کی جارہی ہے،اگر اس نازک وقت میں افغان امن عمل کو کامیاب نہ بنایا گیا تو پاکستان ایک اور غیر اعلانیہ جنگ میں چلا جائیگا جس کا نقصان ایک بار پھر پختون سرزمین کو ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ہم سے زیادہ محب وطن کوئی ہے نہیں،ہمیں اپنے بچوں کے مستقبل کی فکر ہے،افغانستان ہمارا دادا کا ملک ہے اور پاکستان ہمارا ملک ہے،میاں افتخار حسین نے کہا کہ باچا خان کے پیرو کاروں نے یزیدیت کے خلاف حق کا پرچم بلند کرکے جانوں کے نذرانے پیش کئے جو رہتی دنیا تک یاد رکھی جائیگی۔ ۔انہوں نے کہا کہ بابڑہ کے مقام پر ہما رے600 سے زائد کارکنان نے قربانی دی تھی جب کہ دہشتگردی کے موجودہ لہر میں ہمارے 1200 سے زائد کارکنان شہید ہوئے ہیں ۔
میاں افتخار

© Copyright 2019. All right Reserved