ہفتہ‬‮   24   اگست‬‮   2019

محکمہ خزانہ ،سپیشل پولیس فورس کی مستقلی کے لئے چھ ماہ مانگ لئے

کنٹریکٹ پر بھرتی ایس پی اوز کے ڈیٹا کی چھان بین اور مختلف کیٹیگریز میں شامل کرنے کی ہدایت
ان پڑھ اورمیٹرک پاس ایس پی اوز کو کلاس فور کی آسامیوں پر منتقل کردیاجائے گا، حکومتی ذرائع

پشاور(ایم فیاض سے)محکمہ خزانہ خیبرپختونخوانے سپیشل پولیس فورس کے جوانوں کی ملازمتیں مستقل کرنے کیلئے صوبائی حکومت سے چھ ماہ کا وقت مانگ لیا ہے مالی وسائل اور کنٹریکٹ پر بھرتی ہونے والے تمام ایس پی اوز کے ڈیٹا کی چھان بین کرنے اور اہلیت کے مطابق مختلف کیٹیگریز میں شامل کرنے کی ہدایت کی گئی ہے جس کے بعد تمام ایس پی اوز کی فہرستیں مرتب کرکے دوبارہ ارسال کی جائیںگی ذرائع کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے پشاورسمیت دوسرے اضلاع میں پولیس جوانوں کی کمی دورکرنے کیلئے کنٹریکٹ پر سپیشل پولیس فورس کے جوانوں کو بھرتی کیاتھا جنہیں بغیر کسی تربیت کے مختلف تھانوں میں تعینات کردیاگیاتھاجو گزشتہ کئی سالوں سے مختلف تھانوں میں فرائض انجام دے رہے ہیں تاہم موجودہ حکومت نے سابقہ ادوار میں پشاورسمیت تمام ا ضلاع میں کنٹریکٹ پر بھرتی ہونے والے ایس پی اوز کو رواں مالی سال کے بجٹ میں مستقل کرنے کا فیصلہ کیاتھا جس کیلئے صوبائی حکومت نے محکمہ خزانہ کو ان ایس پی اوز کی مستقلی کی ہدایت کردی تھی تاہم ذرائع نے بتایاکہ محکمہ خزانہ نے ان تمام ایس پی اوز کی مستقلی کیلئے صوبائی حکومت سے چھ ماہ کی مہلت مانگ لی ہے جس کے تحت ان ایس پی اوز کی مستقلی پر اٹھنے والے تمام اخراجات کاتخمینہ لگانے کیساتھ ساتھ کنٹریکٹ پر بھرتی ہونے والے ایس پی اوز کی کیٹیگرائزیشن بھی کی جائے گی جس کامقصد ان پڑھ اورمیٹرک پاس ایس پی اوز کو دفتری امور یعنی کلاس فور کی آسامیوں پر منتقل کردیاجائے گا جبکہ ایف اے اور بی اے یا اس سے زائد تعلیم یافتہ اور اہلیت اورقابلیت کے معیار پر پورا اترنے والے ایس پی اوز کو پولیس فورس کا باقاعدہ حصہ بنادیاجائے گاذرائع نے بتایاکہ ایس پی اوز میں زیادہ تر اہلکاران پڑھ ہیں یا مڈل و میٹرک پاس ہیں جنہیں مختلف ادوارمیں امن وامان کی غیر یقینی صورتحال کے پیش نظر عارضی طورپر بھرتی کیاگیاتھا جن کی مدت ملازمت میں وقتا فوقتا اضافہ کیاجارہاہے لیکن اب انہیں مستقل کرنے کا فیصلہ کیاگیاہے ذرائع نے بتایاکہ ان پولیس اہلکاروں کو جو پولیس فورس کا حصہ بنیںگے انہیں تربیت کیلئے بھجوادیاجائیگا کیونکہ زیادہ تر ایس پی اوز بغیر کسی تربیت کے پولیس میں بھرتی ہوکر فرائض انجام دے رہے ہیں تاہم پولیس فورس کامستقل حصہ بننے کے بعد انہیں عام پولیس اہلکاروں کی طرح ہنگومیں تربیت کیلئے بھجوایاجائے گا ذرائع نے بتایاکہ اس حوالے سے جلد ہی تمام اضلاع کے ڈسٹرکٹ پولیس افسران سے ایسے تمام ایس پی اوز کی تعلیمی قابلیت اوراہلیت کے مطابق فہرستیں مرتب کرکے بھجوانے کی ہدایت کردی گئی ہے یاد رہے کہ اس وقت پشاورسمیت خیبرپختونخواکے مختلف اضلاع میں پندرہ ہزار سے زائد سپیشل پولیس فورس کے جوان ڈیوٹیاں انجام دے رہے ہیں جنہیں مستقل کرنے کے بعد باقاعدہ پولیس فورس کاحصہ بنادیاجائے گا ۔
محکمہ خزانہ

© Copyright 2019. All right Reserved