اتوار‬‮   5   جولائی   2020
 
 

سکندر شیر پائو

حکومت کو ضم قبائلی اضلاع کوصحیح معنوں میں قومی دھارے میں لانے کیلئے اقدامات اٹھانے چاہئیں
حکومت کی جانب سے قبائلی اضلاع کے عوام کے مسائل کے حل کیلئے خاطر خواہ اقدامات نہیں اٹھائے گئے
پشاور( بیورو رپورٹ ) قومی وطن پارٹی کے رہنماء سابق سینئر صوبائی وزیر سکندر حیات خان شیرپائو نے کہا کہ حکومت کو ضم شدہ قبائلی اضلاع کوصحیح معنوں میں قومی دھارے میں لانے کیلئے اقدامات اٹھانے چاہئیں۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے جمعرات کو وطن کور پشاور میں ہیومن رائٹ کمیشن آف پاکستان کے ایک وفد بشمول غازی صلاح الدین،حنا جیلانی اور پروین سومروسے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر قومی وطن پارٹی کے رہنماء اسد آفریدی ایڈوکیٹ،طارق احمد خان،ظاہر شاہ صافی ایڈوکیٹ اور ہاشم رضا ایڈوکیٹ بھی موجود تھے۔سکندر شیرپائو نے قبائلی اضلاع میں خیبر پختونخوا اسمبلی کی نشستوں پر ہونے والے انتخابات فوج کی نگرانی میں کرانے پر تشویش کا اظہار کیا۔انھوں نے کہا کہ ضم شدہ قبائلی اضلاع میں انتخابات کے اعلان کے بعد صوبائی وزراء نے وہاں پر ترقیاتی منصوبوں کے اعلانات کرنا شروع کردیئے ہیں جوکہ دھاندلی کے مترادف ہے۔انھوں نے کہا کہ اگرچہ قبائلی علاقوں کو صوبے میں ضم کردیا گیا ہے جبکہ حکومت کی جانب سے وہاں کے عوام کو درپیش مسائل کے حل کیلئے کوئی خاطر خواہ اقدامات نہیں اٹھائے گئے۔انھوں نے کہا کہ کچھ حلقوں کے درمیان اختیارات کی جنگ نے قبائلی اضلاع میں انتظامی خلاء پیدا کردیا ہے
سکندر شیرپائو

 
© Copyright 2020. All right Reserved