منگل‬‮   23   جولائی   2019

فلاحی اداروں کی رجسٹریشن کیلئے کمیشن قائم کرنے کا فیصلہ

کمیشن کو خیراتی اداروں کے فنڈز کا آڈٹ کرانے کااختیار حاصل ہوگا
پشاور(ایم فیاض سے)خیبرپختونخوا حکومت نے صوبے میں خیراتی اداروں کا خیراتی فنڈز جمع کرنے کے نظام کے طریقہ کار کی رجسٹریشن ،انتظامی امور اور قواعدوضوابط کومزید موثر بنانے کا فیصلہ کرلیاہے جس کیلئے باقاعدہ ایک خیراتی کمیشن قائم کیاجائیگا جسے موجودہ یا ریٹائرڈ سول ملازمین ،ریٹائرڈ ججوں اور نجی شعبے سے کمشنر تعینات کیاجاسکے گا حکومت کمشنرز میں سے کسی ایک کو کمیشن کاچیئرمین مقررکریگاجبکہ ایک چیئرپرسن تیسری بار بطور چیئر پرسن تعینات نہیں ہوسکے گا جبکہ رجسٹریشن کیلئے باقاعدہ رجسٹریشن اتھارٹیز قائم کی جائیںگی بغیر رجسٹریشن کوئی بھی خیراتی ادارہ اب فنڈز جمع نہیں کرسکے گا جبکہ کمیشن کو خیراتی اداروں کے فنڈز سے متعلق ریکارڈ طلب کرنے اور خصوصی آڈٹ کرانے کااختیاربھی حاصل ہوگا خیبرپختونخوا چیئریٹی ایکٹ 2019 کانام دیاگیاہے خیراتی فنڈز کو ریگولیٹ کرنے کیلئے تیار ہونے والا بل 2019 آج ایوان میں پیش کیاجائے گابل پاس ہونے کے بعد اس کادائرہ اختیار پورے صوبے تک پھیلا یاجائے گا جو تمام اضلاع میں نافذ العمل ہوگا اس بل کامقصد صوبے میں غربت کاخاتمہ ،تعلیم وتدریسی کوفروغ دینا ،صحت یازندگی کی حفاظتی سہولیات کی فراہمی ،کمیونٹی کی ترقی سمیت انسانی حقوق اوردوسرے اہم عوامل شامل ہیں اس ممکنہ قانون میں تمام خیراتی ادارے جو قواعد وضوابط کے تحت حکومت کیساتھ رجسٹرڈ ہیں اس کے دائرہ اختیارمیں آئیںگے ۔چیئرپرسن اورکمشنرز کمیشن کے منڈیٹ کے ذمہ دارہوںگے کمیشن ایکٹ کے مقاصد کوپایاتکمیل تک پہنچانے کیلئے ضروری تمام فرائض انجام دے گا ان عمومی فرائض کیساتھ ساتھ کمیشن کرسکے گا خیراتی اداروں کی رجسٹریشن کے دوران رجسٹریشن اتھارٹیز کی رہنمائی اورہدایات بھی کمیشن چیئرپرسن دے گا خیراتی اداروں اوران سے فائدہ حاصل کرنے والوں کی حفاظت کی ذمہ داری بھی کمیشن کوتفویض ہوگی خیراتی فنڈز کے انتظامی امور کوکنٹرول کرنے اورنظم وضبط برقراررکھنے کے دوران خیراتی اداروں اور پروموٹرز کے اپنے قانونی فرائض انجام دینے کو یقینی بنائیگا ۔
فلاحی ادارے

© Copyright 2019. All right Reserved