ہفتہ‬‮   21   ستمبر‬‮   2019

عوام مرضی کی کمپنی سے بجلی خرید سکیں گے، عمر ایوب

بجلی کی مارکیٹ کو قائم کرنے میں اہم سنگِ میل طے کرلی جائے گی، جاپانی سفیر سے گفتگو
اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر برائے پاور اور پیٹرولیم عمر ایوب خان نے مُلک میں بجلی تقسیم کار نظام میں ویلنگ اور بجلی کی پرائیویٹ مارکیٹ کے قیام کی نوید سنادی۔ پرائیویٹ بجلی کی مارکیٹ سے بجلی کے صارفین اور بجلی بنانے والے دونوں ہی مستفید ہو سکیں گے۔ اس ضمن میں یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ ترقی یافتہ ممالک میں اس طرح کی مارکیٹ پہلے سے کام کررہی ہیں۔ صارف کی مرضی ہوتی ہے کہ اپنی طے شُدہ ریٹ پر کسی بھی بجلی بنانے والے سے بجلی خرید سکتے ہیں۔ پاکستان میں موجودہ بجلی تقسیم کار نظام ِ حکومت کی ملکیت ہے اس کو ویلنگ کے لئے دستیاب کرنے سے بجلی کی مارکیٹ کو قائم کرنے میں اہم سنگِ میل طے کرلی جائے گی۔وفاقی وزیر برائے پاور نے جاپان کے سفیر کونینوری متسودا کے ساتھ ملاقات میں پاکستان میں انرجی مارکیٹ اور ویلنگ سے متعلق آگاہ کیا۔ ملاقات میں پاکستان اور جاپان کے درمیان موجودہ تعلقات اور خاص طور پر انرجی سیکٹر میں تعاون پر اطمینان کا اظہارکیا گیا۔ ملاقات میں موجودہ تعاون کو مزید فروغ دینے پر بھی زور دیا گیا۔ وفاقی وزیر عمر ایوب خان نے جاپان کے سفیر کو پاکستان کے انرجی سیکٹر سے متعلق آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی نئی قابل تجدید توانائی کی پالیسی اب بننے کے قریب ہے جس میں مُلک میں اس سیکٹر میں انویسٹمنٹ کے مواقع بڑھیں گے۔ اسی طرح سرمایہ کاری کو بھی واضح اور بہت اچھا ریٹرن ملے گا۔ وفاقی وزیر نے جاپان کے سفیر کو گردشی قرضوں کی بڑھوتری کے کم کرنے اور بالکل ختم کرنے کے پلان کے بارے میں بھی آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ان اقدامات کی وجہ سے سرمایہ کاروں کا اعتماد بڑھا ہے دریں اثناءوفاقی وزیر عمر ایوب خان نے پیپکو، تمام بجلی تقسیم کار کمپنیوں (ڈسکوز) اور این ٹی ڈی سی کو بجلی کی جنریشن، ٹرانسمیشن اور تقسیم کاری نظام کا پیک گرمیوں میں فُل لوڈ ٹیسٹ کرنے کے احکامات صارد کر دئیے ہیں جس کا مقصد پورے نظام کی استعداد اور ان میں موجود تکنیکی رکارٹوں کی نشاندہی اور انکے خاتمے کیلئے مربوط پلان بنانا ہے۔
عمر ایوب

© Copyright 2019. All right Reserved