جمعہ‬‮   19   جولائی   2019

زرداری کی گرفتاری کے خلاف پی پی چترال کی احتجاجی ریلی

نیب کی کارروائی قانون سے متصادم،پی پی سلیکٹیڈ احتساب کی مخالف ہے،مقررین
چترال ( نمائندہ اوصاف) پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری کی گرفتاری کے خلاف پی پی پی چترال کی ضلعی رہنمائوں کے زیر انتظام ایک احتجاجی ریلی نکالی گئی ۔ جو چترال بازار سے ہوتا ہواپریس کلب پہنچ کر جلسے کی صورت اختیار کر لی ۔ احتجاجی ریلی میں سنئیر نائب صدر انجینئر فضل ربی جان ، جنرل سیکرٹری محمد حکیم ایڈووکیٹ ، انفارمیشن سیکرٹری قاضی فیصل ، صدر ضلع اپر چترال امیر اللہ ، قاضی سجاد ایڈووکیٹ ، ڈاکٹر یوسف ہارون، صدر بلاول فورس بشیر احمد ، انفارمیشن سیکرٹری اقبال حیات ، صدر لیبر ونگ انیس الدین سمیت بڑی تعداد میں رہنمائوں اور کارکنان نے شرکت کی ۔ اس موقع پر سنیئر نائب صدر فضل ربی جان اور جنرل سیکرٹری محمد حکیم ایڈوکیٹ نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا ۔ کہ پاکستان پیپلز پارٹی شروع دن سے سلیکٹیڈ احتساب کی مخالف ہے ۔ کیونکہ یہ احتساب نہیں انتقام ہے ۔ جسے نیب کے ذریعے کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ پی پی پی کے شریک چیرمین آصف علی زردادری کی گرفتاری بالکل غیر قانونی ہے کیونکہ نیب کی کارروائی قانون سے متصادم ہے۔ انہوں نے کہا ۔ کہ نیب کی طرف سے گرفتاری پہلے کی جاتی ہے ۔ اور کیس بعد میں بنایا جاتا ہے ۔ جو کہ انصاف کو مشکوک بنانے کیلئے کافی ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہم نیب کے اس فعل کی پر زور مذمت کرتے ہیں ۔ اور ہمیں اس سے یہ بو آرہی ہے ۔ کہ اس کی آڑ میں اٹھارویں ترمیم کے خاتمے کی راہ ہموار کی جارہی ہے ۔ جس کے تحت صوبے خود مختاری سے اپنے بعض مسائل حل کرنے کے قابل ہوئے ہیں ۔ پیپلز پارٹی کے جیالے ہر گھر سے آصف علی زرداری کی گرفتاری کے خلاف میدان میں نکلیں گے ۔ اس موقع پر احتجاجی مظاہرین نے آصف علی زرداری کے حق میں اور وزیر اعظم عمران خان کے خلاف گو نیازی گو کے نعرے لگائے ۔
احتجاجی ریلی

© Copyright 2019. All right Reserved