بدھ‬‮   18   ستمبر‬‮   2019

جس چور نے تحفظ حاصل کرنا ہے وہ پی ٹی آئی میں شامل ہو جائے،شاہد خاقان


جس چور نے تحفظ حاصل کرنا ہے وہ پی ٹی آئی میں شامل ہو جائے،شاہد خاقان
سارے کرپٹ لوگ عمران خان کے دائیں بائیں بیٹھے ہیں، ان کو بھی گرفتار کیا جائے
اسلام آباد(وقائع نگار ) مسلم لیگ(ن)نے وزیراعظم عمران خان سے اپنے رواں سال کے ٹیکس گوشوارے عوام کے سامنے رکھنے کا مطالبہ کردیا ،مسلم لیگ ن کے سینئر نائب صدر شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ حکومت اعتماد کھو چکی ہے جس چور نے بھی تحفظ حاصل کرنا ہے وہ پی ٹی آئی میں شامل ہو جائے،سارے کرپٹ لوگ عمران خان کے دائیں بائیں بیٹھے ہیں، ان کو بھی گرفتار کیا جائے،ٹیکس چوری کی بات کرنی ہے تو پہلے وزیر اعظم کو ہتھکڑی لگائیں،وہ بتائیں کہ روزمرہ کے اخراجات کہاں سے پورے کر رہے ہیں،ایک سال میں ملک کی معیشت آدھی رہ گئی،بیروزگاری بڑھ گئی ہے،نیب خود قابل احتساب ہے، فلمیں موجود ہیں۔منگل کو پارلیمنٹ ہا وس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ آج حمزہ شہباز کو نیب نے گرفتار کیا ہے ،جس سیاست دان کو بھی بدنام کرنا ہو تو اس پر آمدن سے زائد اثاثوں کا الزام لگا دیا جاتا ہے ،حمزہ شہباز ہر پیشی پر حاضر ہوتے رہے ہیں ،جب یہ کیس شروع ہوا تو بتایا گیا کہ 87 ارب کی منی لانڈرنگ ہوئی ہے ،پھر بتایا کہ 33 ارب کی منی لانڈرنگ ہوئی ہے اور آج بات 18 کروڑ پر جا پہنچی ،یہ کیس اس وقت کا ہے جب مشرف کی حکومت تھی ،اور حمزہ شہباز رکن اسمبلی نہیں تھے،18 کروڑ ملک کے اندر آنے کا الزام ہے ،منی لانڈرنگ ملک کے اندر آنے والے پیسے پر ہوتی ہے ؟ شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حمزہ شہباز نے یہ پیسہ تمام ٹیکس ریٹرن میں ظاہر کیا ہے ،یہ صرف سیاستدانوں کو بدنام کرنے کی کوشش ہے ،ہم احتساب سے نہیں گھبراتے الزام لگانا ہے تو لگائیں لیکن ثبوت بھی سامنے رکھیں ،جو الزام حمزہ شہباز پر لگایا ہے یہ الزام ہر اس شخص پر لگتا ہے جس کو بیرون ملک سے پیسہ آتا ہے،احتساب انتقام کا نام نہیں ہوتا،احتساب کا معیار سب کیلئے ایک ہونا چاہیے،خسرو بختیار،علیم خان،جہانگیر ترین کو بھی گرفتار کر کے ایسے سوال سوال کریں،شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ثبوت دینے سے قبل ہی گرفتاری کی جاتی یے،سارے کرپٹ لوگ عمران خان کے دائیں بائیں بیٹھے ہیں، ان کو بھی گرفتار کیا جائے، جس ملک کا وزیر اعظم ٹیکس چور ہو وہ صبح نو بجے اٹھ کر کہے کہ تم ٹیکس ادا نہیں کرتے ،ٹیکس ادا کرو؟ شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ حکومت اعتماد کھو چکی ہے جس چور نے بھی تحفظ حاصل کرنا ہے وہ پی ٹی آئی میں شامل ہو جائے،ٹیکس چوری کی بات کرنی ہے تو پہلے وزیر اعظم کو ہتھکڑی لگائیں،وہ بتائیں کہ روزمرہ کے اخراجات کہاں سے پورے کر رہے ہیں،ایک سال میں ملک کی معیشت آدھی رہ گئی،بیروزگاری بڑھ گئی ہے،نیب خود قابل احتساب ہے، فلمیں موجود ہیں،1550 کا اضافی ٹیکس غریب عوام نے ادا کرنا ہے،عمران خان اس سال کے ٹیکس گوشواریگوشوارے عوام کے سامنے رکھیں
شاہد خاقان

© Copyright 2019. All right Reserved