بدھ‬‮   18   ستمبر‬‮   2019

آزادکشمیرکے ترقیاتی بجٹ میں پی پی کے بعدپی ٹی آئی حکومت کی کٹوتی


دو
آزادکشمیرکے ترقیاتی بجٹ پر پی پی کے بعد پی ٹی آئی حکومت کا کٹ
لیگی حکومت نے پانچ سال میں ترقیاتی بجٹ 9ارب سے بڑھاکر25ارب کردیاتھا

اسلام آباد (عمرفاروق سے ) آزادکشمیرکے ترقیاتی بجٹ میں پیپلزپارٹی کے بعد پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے کٹوتی کی ہے مسلم لیگ ن کی حکومت نے پانچ سالوں میں آزادکشمیرکا ترقیاتی بجٹ 9ارب روپے سے بڑھاکر25ارب روپے کردیا تھا ۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے گزشتہ سال برسراقتدارآنے کے بعد ستمبرمیں دو فی صدکٹ لگادیاتھا۔ تفصیلات کے مطابق آزادکشمیرکے عوام کے لیے مسلم لیگ ن کی وفاق میں حکومت مہربان ثابت ہوئی جبکہ پاکستان پیپلزپارٹی اورپاکستان تحریک انصاف نے کشمیری عوام کومایوس کیا پی ٹی آئی کی حکومت نے پہلے سال ہی کشمیرکے لیے بجٹ میں کوئی اضافہ نہ کیا ۔واضح رہے کہ 2010-11میں ترقیاتی بجٹ10ارب 75کروڑ تھا پیپلز پارٹی کی مرکزی حکومت نے اس میں کٹوتی کر کے 6ارب 7کروڑ کر دیا تھا ۔2011-12میں پاکستان پیپلزپارٹی کی مرکزی حکومت نے آزادکشمیرکاترقیاتی بجٹ کے لیے 8ارب20کروڑ روپے مختص کیے تھے پیپلزپارٹی کی حکومت نے آخری سال کشمیرپرمہربانی کرت ہوئے2012-13میں9 ارب59کروڑ کردیا ۔ آزاد کشمیر حکومت نے یوسف رضا گیلانی، پرویز اشرف کی حکومتیں میں20ارب کے بیل آئوٹ پیکج کا اعلان کیا ان کو ایک روپیہ بھی نہیں ملا اور پاکستان میں اسپیشل ڈویلپمنٹ پیکج کے تحت بھی پیپلز پارٹی کی مرکزی حکومت نے آزاد کشمیر میں ایک پیسہ بھی نہیں دیا جبکہ میاں محمد نواز شریف کی حکومت آنے کے بعد اس پیکج کے تحت آزاد کشمیر کو9ارب روپے دئیے گئے،آزادکشمیر کا ترقیاتی بجٹ10ارب پچاس کروڑ تک بڑھایا،مسلم لیگ ن کی حکومت نے مالی سال 2015/16کے لیے آزادکشمیرکے لیے ترقیاتی بجٹ میں مزیداضافہ کرتے ہوئے 11ارب 50کروڑروپے کردیامالی سال 2016/17میں وفاقی حکومت نے آزادکشمیرکے ترقیاتی بجٹ کو 11ارب 56کروڑروپے سے بڑھا کر 25ارب 34کروڑ43لاکھ کیاتھا ۔اورگزشتہ سال یہ بجٹ 25ارب 50کروڑروپے تک پہنچادیا وفاق میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے برسراقتدارآنے کے بعد2ارب 41کروڑ22لاکھ 17ہزارروپے کم کردیئے یہ کٹوتی اگلے مالی سال کے لیے برقراررکھی گئی ہے ۔
بجٹ کٹ

© Copyright 2019. All right Reserved