منگل‬‮   18   جون‬‮   2019

تین کالم۔۔۔۔۔۔۔۔۔ 26ویں آئینی ترمیم پر تمام سیاسی جماعتوں کا مثبت رویہ خوش آئند ہے،صمصام بخاری


26ویں آئینی ترمیم پر تمام سیاسی جماعتوں کا مثبت رویہ خوش آئند ہے،صمصام بخاری
اپوزیشن دیگر قومی معاملات میں بھی ذمہ دارانہ کردار ادا کرے ،جنوبی پنجاب صوبہ پر ن لیگ کی دو عملی افسوسناک ہے
عمران خان کی قیادت میں انتخابی وعدے پورے کر ر ہے ہیں،صوبائی وزیراطلاعات،باب پاکستان منصوبے کا دورہ

لاہور(سیاسی رپورٹر)صوبائی وزیر اطلاعات سید صمصام علی بخاری نے کہا ہے کہ 26ویں آئینی ترمیم پر تمام سیاسی جماعتوں کا مثبت رویہ خوش آئند ہے۔گذشتہ روز اپنے ایک بیان میں صوبائی وزیر نے کہا کہ قبائلی اضلاع کی ترقی کا اپنا ایک اور وعدہ پی ٹی آئی نے پورا کر دیا۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں دیگر قومی معاملات میں بھی ذمہ دارانہ کردار ادا کریں۔جنوبی پنجاب صوبہ پر نواز لیگ کی دو عملی افسوسناک ہے۔ نواز لیگ نے اسمبلی کے اندر اور باہر مختلف موقف اختیار کیا۔سیاست چمکانے والے جنوبی پنجاب کے عوام کو گمراہ کرتے رہے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی پی ٹی آئی کی حمایت کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ترقی و خوشحالی جنوبی پنجاب کے عوام کا بھی بنیادی حق ہے۔ گزشتہ10برسوں میں جنوبی پنجاب کے فنڈز خرد برد کیے گئے۔ نواز لیگ بتائے کہ راجن پور اور بھکر کے عوام کا کیا قصور ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں انتخابی وعدے پورے کر ر ہے ہیں۔ ملک بھر میں یکساں خوشحالی کا خواب انشاء اللہ شرمندہ تعبیر ہوگا۔دریں اثناءصوبائی وزیراطلاعات و ثقافت سید صمصام علی بخاری نے گذشتہ روز باب پاکستان منصوبے کا دورہ کیا۔ اس موقع پر سیکرٹری باب پاکستان فاؤنڈیشن پرویزاختر نے صوبائی وزیرکو باب پاکستان منصوبے کی تکمیل میں ہونے والی تاخیر کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ صوبائی وزیرنے ہدایت کی کہ منصوبے کی جامع پریزنٹیشن تیار کی جائے جس میں اس کی اہمیت، قائد اعظم کی اس مقام پر آمد اور مہاجرین کی حالت زار دیکھ کر آبدیدہ ہونااور ان کتابوں کا حوالہ دیا جائے جن میں مہاجرین کے پاکستان کے پہلے پڑاؤ کا تفصیلی ذکر ہے۔ انہوں نے کہا کہ باب پاکستان منصوبے کیلئے مختص 111ایکڑ اراضی پر مشتمل ایسی کمرشل سرگرمیوں کو بھی منصوبے میں شامل کیا جائے جن کی بنیاد پر باب پاکستان مالی طور پر خودمختار ہو جائے۔ انہوں نے کہا کہ اگر باب پاکستان کا منصوبہ اپنے حقیقی پلان کے مطابق تعمیر ہو تو یہ ایک نیا مینارپاکستان کمپلیکس بن سکتا ہے۔ صوبائی وزیرنے کہا کہ اس منصوبے کی تکمیل کیلئے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ اور بی او ٹی ماڈل کے امکانات کا بھی جائزہ لیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ وہ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اور وزیراعظم پاکستان عمران خان سے اس منصوبے کو اس کی سپرٹ کے مطابق مکمل کرانے کے لئے فنڈز کی فراہمی کی درخواست کریں گے۔ اس موقع پر صوبائی وزیراطلاعات کو باب پاکستان منصوبے کا ماڈل بھی دکھایا گیا۔ سیکرٹری پرویزاختر نے بتایا کہ منصوبے کی تکمیل کے لئے خطیر رقم درکار ہے۔ منصوبے کے بنیادی سٹرکچر کا 60فیصد مکمل ہو چکا ہے اور اگر حکومت ہر سال باقاعدگی سے فنڈز ریلیز کرتی رہے تو تحریک پاکستان کے پس منظر میں ہجرت کی صعوبتیں برداشت کرنے والوں کی یاد زندہ رکھنے کے لئے اس یادگار کی تعمیر کامنصوبہ جلد مکمل ہو سکتا ہے۔
صمصام بخاری

© Copyright 2019. All right Reserved