منگل‬‮   18   جون‬‮   2019

آشیانہ سکیم،شہباز،فوادحسن،احدچیمہ نے کرپشن کی،نیب

شہباز شریف کمپنی کی میٹنگ کی صدارت کرتے رہے، جواب سپریم کورٹ میں جمع

اسلام آباد(نیوزایجنسی ) نیب نے شہباز شریف اور فواد حسن فواد کی طرف سے آشیانہ ہاؤسنگ سکیم میں کس طرح اختیارات کا غلط استعمال کیا تفصیلی جواب سپریم کورٹ میں جمع کرادیا ہے نیب کی طرف سے جمع کرائے گئے سات صفحات پر مشتمل جواب میں بتایا گیا ہے کہ شہباز شریف کا پنجاب لینڈ ڈویلپمنٹ کمپنی سے ڈائریکٹ کوئی تعلق نہیں تھا وہ بطور وزیراعلیٰ کمپنی کے بورڈ ممبران کی نامزدگی کا اختیار رکھتے تھے جس کے برعکس شہباز شریف کمپنی کی میٹنگ کی صدارت جیسے امور سرانجام دیتے پائے گئے ہیں انہوں نے بطور وزیراعلیٰ بغیر کسی شکایت کے پہلی کمپنی کا ٹھیکہ منسوخ کردیا انہوں نے ماڈل ٹاؤن اپنے گھر میں احد چیمہ کو منصوبہ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت مکمل کرنے کے احکامات دیئے سو کنال اراضی پیراگون سے خریدنے کی ہدایات شہباز شریف کی تھیں فواد حسن فواد نے کامران کیانی سے بذریعہ بینک 55ملین روپے لئے شہباز شریف نے منصوبے کی خواہش مند دوسری کمپنی کا ٹھیکہ بھی بغیر کسی شکایت کے منسوخ کیا معاملے میں ایسی کڑیاں موجود ہیں کہ شہباز شریف فواد حسن فواد اور احد چیمہ نے کرپشن کی اس کرپشن کی دستاویزی اور زبانی شواہد موجود ہیں
نیب

© Copyright 2019. All right Reserved