جمعہ‬‮   23   اگست‬‮   2019

معاشی استحکام کیلئے حکومت سرمایہ کاروں کو ریلیف فراہم کرے،فیصل اقبال ، ملک رفاقت

جب تک روپے کی قدر گرتی رہے گی ملک میں مہنگائی کم نہیں ہو گی ، ڈالر کی قیمت کو کنٹرول کیا جائے
بجٹ میں رئیل اسٹیٹ پر عائد بھاری ٹیکس ختم کیے جائیں،ملک ندیم،سیف الرحمان، امین خان، خالد خان

واہ کینٹ ( نمائندہ خصوصی) پراپرٹی انڈسٹری کی ترقی کے لیے حکومت آمدہ بجٹ میں سنجید گی سے غور کرے بجٹ میں ملکی معیشت کا رخ رئیل اسٹیٹ کے طرف موڑا جائے حکومتی خزانے کو کثیر ریونیو حاصل ہو گا ملکی معیشت کو متعدد چیلنجز کا سامنا ہے رئیل اسٹیٹ کے شعبے کے لیے اقدامات کر کے ملکی معیشت کو مشکلات سے نکالا جاسکتا ہے ملک میں معیشت کے استحکام کے لیے حکومت سرمایہ کاروں کو ریلیف دے جب تک روپے کی قدر گرتی رہے گی ملک میں مہنگائی کم نہیں ہو گی ، ڈالر کی قیمت کو کنٹرول کیا جائے، ڈالر کی قدر بڑھنے سے مہنگائی کا طوفان آجاتا ہے اور ملکی قرضوں پر بھی شرح سود میں بے تحاشا اضافہ ہو جاتا ہے۔ بجٹ میں رئیل اسٹیٹ پر عائد بھاری ٹیکس ختم کیے جائیں ۔ ان خیالات کا اظہار پراپرٹی کے کاروبار سے وابسطہ شخصیات اقبال ٹائون کے محمد فیصل اقبال ، چراغیہ ٹائون کے ملک رفاقت زمان گجر ، کوہستان ہوم کے ملک ندیم کوہستان ، عطاری بلڈرز کے سیف الرحمن خان ، رہیبر ٹائون کے مالک امین خان ، خالد خان اور حاجی ملک اورنگزیب نے اوصاف سے گفتگو کے دوران کیا۔ ان شخصیات کا کہنا ہے معیشت کی ترقی ، کاروبار کے فروغ اور روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے اور ملک سے غربت کو کم کرنے کے لیے رئیل اسٹیٹ کا شعبہ اہم کردار ادا کرتا ہے لیکن حکومت نے2016-17میں اس شعبے پر بھاری ٹیکس عائد کر دیے جس سے اس شعبے کی ترقی بری طرح متاثر ہوئی ہے جبکہ دوسری جانب ڈالر کی قیمتوں میں اضافے سے بھی کاروبار بھی شدید مندے کا شکار ہیں اور بے روزگاری بڑھ رہی ہے پڑھے لکھے نوجوانوں کے لیے رئیل اسٹیٹ میں آگے بڑھنے کی بڑی گنجائش ہے ۔

© Copyright 2019. All right Reserved