بدھ‬‮   26   جون‬‮   2019

ہری پور میں بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ، عوام کی احتجاج کی دھمکی

سحر اور افطار میں عوام کو مشکلات ، روزہ داروں کی حکمران کو بددعائیں
ہری پور (نمائندہ خصوصی)ہری پور میں سحری و افطاری کے وقت بجلی کی لوڈ شیڈنگ سے روزہ دراروں میں غم و غصہ ، حکمران اپنے قول و فعل پر کھڑے نہ ہو سکے ، ماہ صیام کے پہلے عشرے میں ہی لوڈ شیڈنگ شروع ، سحری افطاری کے علاوہ تراویح کے وقت میں کی جانے والی لوڈ شیڈنگ کے خلاف متاثرین تربیلہ ڈیم نے بڑے احتجاج کی دھمکی دیدی ، لوڈ شیڈنگ واپڈا کر رہا ہے یا واپڈا حکومت کو بدنام کر رہا ہے ، وفاقی وزیر عمر ایوب خان سے متاثرین تربیلہ ڈیم کا جواب طلب ، حکومت کی جانب سے ماہ صیام میں لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کا دعویٰ کیاگیا تھا لیکن افسوس سابقہ رمضان کی طرح اس رمضان میں بھی چار روزے گزرنے نہ پائے تھے کہ واپڈا نے اپنے تہور دکھانے شروع کر دیئے اور تراویح سحری افطار کے ٹائم میں لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے جس کی وجہ سے بالخصوص گھریلو امور میں خواتین کو پریشانی کے علاوہ مساجد میں نمازتراویح بھی اندھیرے میں پڑھی جانے لگی اور بدبخت حکمران روزہ داروں سے بددعائیں سمیٹنے لگے موجودہ صورتحال یہ ہے کہ چوتھے روزے کے بعد کھلابٹ ٹائون شپ کے چاروں سیکٹروں ملحقہ آبادیوں میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے اور حکومت اپنے وعدے کی خلاف ورزی کر رہی ہے ۔

© Copyright 2019. All right Reserved