پیر‬‮   26   اگست‬‮   2019

نظامت شہری دفاع میں اصلاحات دھری کی دھری رہ گئیں


اسسٹنٹ ڈائریکٹر حویلی کی مظفرآباد بیٹھ کر تنخواہ وصولی ،سرکاری گاڑی رشتہ داروں وگھریلو سامان کیلئے مختص

چیف سیکرٹری اے ڈی کی مسلسل غیر حاضری اورگاڑی کے ناجائز استعمال کا نوٹس لیں،عمائدین کامطالبہ

مظفرآباد(نمائندہ خصوصی)نظامت شہری دفاع میں گڈ گورننس کی دھجیاں اڑائی جانے لگیں ‘ چیف سیکرٹری آزا د کشمیر کے احکامات بھی کھوہ کھاتے ‘ نظامت شہری دفاع میں اصلاحات دھری کی دھری رہ گئیں ‘ اسسٹنٹ ڈائریکٹر شہری دفاع ضلع حویلی نے مظفرآباد میں ہی بیٹھ کر تنخواہ وصول کرنا شروع کررکھی ہے ۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر حویلی حاضر ہی نہیں ہوتے اور ادارے کی سرکاری گاڑی رشتہ داروں کی سیر و تفریح اور گھریلو سامان کی ڈھلائی کے لئے مختص کررکھی ہے ۔ حویلی لائن آف کنٹرول پر واقع حساس ترین ضلع ہے اور یہاں شہری دفاع کے ذمہ اہم ترین کام ہیں ۔ حویلی میں شہری دفاع کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی آسامی موجود ہے لیکن اس آسامی کے خلاف تعینات اسسٹنٹ ڈائریکٹر حویلی جانا گوارا ہی نہیں کرتے موصوف کی اپلائیڈ فار گاڑی ہر وقت شہر اور مضافات میں موجود رہتی ہے ۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر حویلی کو ضلع کی حساس نوعیت کے پیش نظر اپ ماڈل کی نئی گاڑی مہیا کی گئی ہے ۔ گاڑی حویلی کے عوام کے لئے کم استعمال ہوتی ہے ۔ حویلی کے عمائدین چوہدری لطیف ، سردار محمد یوسف نے یہاں میڈیا سے گفتگو کے دوران چیف سیکرٹری آزاد کشمیر سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ شہری دفاع کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی حویلی سے مسلسل غیر حاضری کا نوٹس لیں اور حویلی کے مہیا کردہ اپ ماڈل کی سرکاری گاڑی کے ناجائز اور غیر قانونی استعمال کا نوٹس لیں ۔ انہوں نے چیف سیکرٹری سے مطالبہ کیا کہ وہ حویلی میں شہری دفاع کے دفاتر کا معائنہ کریں اور شہری دفاع سے متعلق کھلی کچہری کا انعقاد کریں تاکہ انہیں حقائق کا علم ہو۔
نظامت شہری دفاع

© Copyright 2019. All right Reserved