جمعہ‬‮   23   اگست‬‮   2019

دھیرکوٹ ہسپتال میں خاتو ن ہلاکت کی انکوائری کروائی جائے


دھیرکوٹ ہسپتال میں خاتو ن ہلاکت کی انکوائری کروائی جائے
اگر عملہ قصور وار ہے تو فوری تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائے، بار ایسوسی ایشن
دھیرکوٹ(نمائندہ اوصاف)دھیرکوٹ ہسپتال میں زچگی کے دوران ہلاکت پر بار ایسوسی ایشن نے ایک غیر جانبدرانہ انکوائری کمیٹی بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔ گزشتہ دنوں تحصیل ہیڈ کواٹر ہسپتال دھیرکوٹ میں زچگی کے دوران خاتون کی ہلاکت پر خاتون کے ورثاء کی طرف سے یہ الزام ہے کہ خاتون کی موت عملہ کی غفلت اور لاپرواہی کی وجہ سے ہوئی ہے۔ اگر ایسا ہوا ہے تو بار ایسوسی ایشن دھیرکوٹ وزیر اعظم آزاد کشمیر اور وزیر صحت سے مطالبہ کرتی ہے کہ فوری طور پر ایک انکوائری کمیٹی بنائی جائے اور اگر عملہ قصور وار ہے تو فوری طور قصورواران کے خلاف تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائے۔ان خیالات کا اظہار صدر بار ایسوسی ایشن دھیرکوٹ راجہ محمد اشتیاق خان ایڈووکیٹ اور سیکرٹری بار سید ثاقب ضیاء ایڈووکیٹ نے پریس کانفرنس کے دوران کیا۔انہوں نے کہا کہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں سٹاف کی کمی ہے جس باعث بھی آئے روز ہلاکتوں کا معمول بنتا جا رہا ہے۔وکلا رہنماوں نے بار ایسوسی ایشن کے توسط سے وزیر اعظم سے اپیل کی کہ وہ بجٹ میںسٹاف کی کمی کو پورا کریں۔ اس موقع پر راجہ خالقداد خان ایڈووکیٹ، سردار عارف عباسی ایڈووکیٹ، جاوید اقبال ایڈووکیٹ ، راجہ سہراب ایڈووکیٹ ، راجہ مظہر ایڈووکیٹ، سردار عطاالرحمٰن ایڈووکیٹ، راجہ افراق ایڈووکیٹ، صابر اکبر ایڈووکیٹ، ماریہ فاروق ایڈووکیٹ،سردار ممتاز خان ایڈووکیٹ اور دیگر وکلاء موجود تھے۔
انکوائری مطالبہ

© Copyright 2019. All right Reserved