بدھ‬‮   21   اگست‬‮   2019

محکمہ بہبود آبادی کے ملازمین سکیلز وائز تنخواہو ں سے محروم


ویلج بیسڈ ورکرز جن کی تعداد 67ہے کو تاحال سکیل وائز تنخواہیں نہیں دی جا رہیں ،رولز کی آڑ میں انہیں نظر انداز کیا جا رہا ہے
حکومت نے گزشتہ بجٹ میں 572ملازمین کو نارمل میزانیہ پر لانے کا اعلان کیا جس کی روشنی میں انہیں سکیل دئیے گئے تھے
مظفرآباد(نمائندہ خصوصی)محکمہ بہبود آبادی آزادکشمیر کے متعدد سوشل آرگنائزر اور 67ویلج بیسڈ فیملی پلاننگ ورکرز فنانس اور سیکرٹریٹ بہبود آبادی کی جانب سے پے سکیل جاری ہونے کے باوجود سکیل وائز تنخواہ نہ مل سکی ۔2سال سے سروس رولز بھی مرتب نہ ہو سکے ۔مستقبل کا تعین بھی نہ ہو سکا۔تفصیلات کے مطابق 18ویں ترمیم کے بعد وفاق نے محکمہ بہبود آبادی آزاد حکومت کے سپرد کر دیا تھا ۔اور ساتھ رقم بھی مہیا کی گئی اور سٹاف کو مستقل کرنے کی بھی ہدایات جاری کیں ۔موجودہ حکومت نے اپنے گزشتہ بجٹ اجلاس میں بہبود آباد کے 572ملازمین کو نارمل میزانیہ پر لانے کا اعلان کیا جس کی روشنی میں محکمہ فنانس کی رضا مندی کے بعد سیکرٹریٹ بہبود آباد سے انہیں سکیل دئیے گئے ۔ڈائریکٹر سے خاکروب تک سکیل جاری ہوئے ویلج بیسڈ فیملی پلاننگ ورکرز کو سکیل نمبر 1جبکہ سوشل آرگنائزر کو سکیل نمبر سات دیا گیا مگر ایک سال سے زائد عرصہ گزرنے کے باوجود دیگر ملازمین کو نو سکیل وائز تنخواہیں دی جا رہی ہیں مگر ویلج بیسڈ فیملی پلاننگ ورکرز جن کی تعداد 67ہے اور سوشل آرگنائزر کو تاحال سکیل وائز تنخواہیں نہیں دی جا رہی ہیں ۔رولز کی آڑ میں انہیں نظر انداز کیا جا رہا ہے ۔رولز بنانا بھی آزاد حکومت کے کسی محکمہ کا کام ہے کہ سال ہا سال سے رولز مرتب کیوں نہیں کیے جاتے ۔
ملازمین سکیلز

© Copyright 2019. All right Reserved