ہفتہ‬‮   21   ستمبر‬‮   2019

ہسپتالوں کی نجکاری ،سیاسی مداخلت، ڈاکٹرز کونسل کا کل صوبائی اسمبلی کے سامنے دھرنے کا اعلان

صوبائی حکومت مسائل حل کرنے میں سنجیدہ نہیں،مطالبات نہ ما نے گئے تو احتجاجی کا دائرہ وسیع کردینگے
5 ہزار ڈاکٹروں کا ڈومیسائل پر تبادلہ قبول نہیں کریںگے، مختلف تنظیموں کےمشترکہ اجلاس میں ڈاکٹر رہنمائوں کافیصلہ
پشاور(بیورو رپورٹ)خیبر پختونخوا ڈاکٹرز کونسل کا صوبائی حکومت کی طرف ہسپتالوں کو نجکاری، سیاسی اثر ورسوخ اور ڈومیسائل پرماس تبادلوں کیخلاف17 اپریل کوصوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنے کا اعلان کردیا۔اس سلسلے میں ڈاکٹروں کا مشتر کہ اجلاس منعقد ہوا جس میں انہوں نے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت بند کمروں میں ڈاکٹروں کے تبادلوں کے فیصلے کرتی ہے جبکہ صوبائی حکومت مسائل کو حل کرنے میں سنجیدگی سے کام نہیں لے رہی۔انہوں نے کہا کہ ڈاکٹروں کو دبانے کیلئے حکومت نے 5 ہزار ڈاکٹروں کو ڈومیسائل پر تبادلہ کی عمل میں مصروف ہے جو کسی بھی صورت قبول نہیں جبکہ ڈاکٹرز کونسل اسکی شدید مذمت کرتے ہوئے 17 اپریل کو صوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاج کریں گے جس میں تمام ڈاکٹرز تنظیمیں پی ڈی اے، وائی ڈی اے، پیما، وطن پال ڈاکٹرز، ملگری ڈاکٹران، میڈیکل آفیسرز فورم، سینئیر فیکلٹی کیساتھ ساتھ انصاف ڈاکٹرز فورم بھی شرکت کریں گے ۔مطالبات نہ ما نے گئے تو احتجاجی کا دائرہ وسیع کریں ۔
ڈاکٹرز کونسل

© Copyright 2019. All right Reserved