ہفتہ‬‮   21   ستمبر‬‮   2019

تنخواہیں بند،گھروں کے چولہے ٹھنڈے، جنوبی وزیرستان کے خاصہ داروں کاپولیو مہم بائیکاٹ کااعلان

کسی نے بھی بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں تر انکا گھر مسمار کیا جائیگا اور دس لاکھ روپے جرمانہ لیاجائیگا
ایک منظم سازش کے تحت خاصہ دار فورس کو دیوار سے لگایا جارہا ہے،صوبیدار رسول جان وزیر ، عمر خان وزیرودیگر
وانا(نامہ نگار) جنوبی وزیرستان کے چھ ہزار خاصہ دار فورس نے آنے والے پولیو مہم کے بائیکاٹ کا باضابطہ اعلان کردیا ،دس مہینے سے تنخواہیں نہیں ملی، حکومت نے دردر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور کردیا ہے ،کسی نے بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں انکا گھر مسمار کیا جائیگا اور دس لاکھ روپے جرمانہ بھی لیا جائیگا ،27اپریل تک بند تنخواہیں نہ ملی تو متبادل انتہائی اقدام پر مجبور ہونگے۔ صوبیدار رسول جان وزیر ، صوبیدار عمر خان وزیراورصوبیدار سلام وزیر کی وانا پریس کلب میں پریس کانفرنس تفصیلات کے مطابق صوبیداروں نے وانا پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایک منظم سازش کے تحت خاصہ دار فورس کو دیوار سے لگایا جارہا ہے پچھلے دس مہینوں سے ہماری تنخواہیں روکی گئیں ہیں یہ وہ فورس ہے جنہوں نے بڑے کٹھن حالات میں اپنے فرائض سرانجام دیں اور بڑی قربانیاں پیش کیں لیکن افسوس کی بات ہے کہ آج قوم و ملک کیلئے خدمت انجام دینے والے اہلکاروں کو اپنی خدمت کا صلہ بھی نہیں دیا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہمارے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں اور ہمارے بچے تعلیم کے زیور سے محروم ہورہے ہیں ہمیں چندہ اکھٹا کرنے کی طرف دھکیلاجارہا ہے کیونکہ اگر ہم نے چندہ اکھٹا نہ کیا تو ہمارے بچے تعلیم سے محروم ہوجائینگے ۔صوبیداروں نے صحافیوں کے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم نے متفقہ فیصلہ کیا ہے کہ جب تک ہمیں پچھلے دس مہینوں سے روکی ہوئی تنخواہیں نہیں ملتی تب تک آنے والے پولیو مہم کا بائیکاٹ جاری رہے گا خاصہ دار فورس نے یہ بھی فیصلہ کیا ہے کہ جس کسی اہلکار نے بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں انکا گھر مسمار ہونے کے ساتھ ساتھ ان سے دس لاکھ روپے جرمانہ بھی لیا جائیگا ۔فورس نے حکومت کو 27اپریل تک تاریخ کی ڈیڈلائن دیتے ہوئے کہا کہ 27اپریل کے بعد ہم صوبیداران و دیگر فورس اپنے تمام سٹار و یونیفارم میں تیار ہوکر آگلے لائحہ عمل کا اعلان کرینگے اور انتہائی سخت اقدام پر مجبو ر ہونگے ۔
خاصہ دار اعلان

© Copyright 2019. All right Reserved