بدھ‬‮   26   جون‬‮   2019

چائلڈپروٹیکشن کمیشن ادارہ ختم نہیں جائے گا، وزیر قانون

سوشل ویلفیئرڈیپارٹمنٹ کے آئندہ اجلاس میں کمیشن کے مسائل حل کردئیے جائینگے، اسمبلی میں بیان

پشاور(بیورو رپورٹ) وزیرقانون خیبرپختونخوابیرسٹرسلطان محمدنے اپوزیشن اراکین کویقین دلایاہے کہ چائلڈپروٹیکشن کمیشن صوبے کااہم ادارہ ہے جسے کسی صورت ختم نہیں کیاجائے گا سوشل ویلفیئرڈیپارٹمنٹ کے آئندہ اجلاس میں کمیشن کودرپیش مسائل حل کردئیے جائینگے۔صوبائی اسمبلی اجلاس میںاے این پی کی رکن شگفتہ ملک نے توجہ دلائونوٹس پیش کرتے ہوئے کہاکہ چائلڈپروٹیکشن کمیشن جوکہ یونیسف کے تعاون سے 2011 چل رہاتھااوریونیسف نے کمیشن کوچلانے کیلئے31دسمبر2018کاٹائم دیدیا اورحکومت کوچلانے کیلئے کہا ہے جوکہ یہ ابھی سے12اضلاع میں بندہوگیاہے اورحکومت فنڈزکی دستیابی کے باوجود ا سکوچلانے میں دلچسپی نہیں لے رہی ہے جبکہ چارسالوں سے اسکاسربراہ بھی نہیں کمیشن کس مقصدکیلئے بناتھاکیونکہ آج بھی بچے زیادتی کانشانہ بن رہے ہیں ۔جواب دیتے ہوئے وزیرقانون سلطان محمد نے کہاکہ چائلڈپروٹیکشن کمیشن ایک اہم ادارہ ہے یونیسف کے تعاون سے12اضلاع میں یونٹس کام کررہے تھے اوراب بھی کررہے ہیں جن کیلئے فنڈمختص ہوچکاہے وزیراعلیٰ کے زیرصدارت سوشل ویلفیئرکے آئندہ اجلاس کے ایجنڈے میں اس مسئلے کوشامل کیاگیاہے اجلاس جلد طلب کیاجائیگا انہوں نے یقین دلایاکہ تمام مسائل اجلاس میں حل کرلئے جائینگے کمیشن کسی صورت ختم نہیں ہوگا۔ن لیگ کے سردارخان نے توجہ دلائونوٹس پیش کیاکہ میرے حلقے صوبائی فنڈ کے تحت منصوبوں کا افتتاح پی ٹی آئی کے ایم این اے کررہے ہیں جس سے امن وامان کا مسئلہ پیداہورہاہے
وزیر قانون

© Copyright 2019. All right Reserved