ہفتہ‬‮   17   اگست‬‮   2019

حج کے نام پرکروڑوں بٹورنے والے ملزم کی درخواست ضمانت مسترد

ملزم نے کرسٹینا نامی انگریز خاتون کے ساتھ مل کر حاجیوں کولوٹا، نیب کا موقف
پشاور(بیورورپورٹ)پشاورہائی کورٹ کی جسٹس مسرت ہلالی اور جسٹس اشتیاق ابراہیم پرمشتمل دورکنی بنچ نے سادہ لوح افراد سے حج کے نام پرکروڑوں روپے بٹورنے کے الزام میں گرفتار ملزم کوجیل میں بندرکھنے کے احکامات جاری کردئیے اورملزم کی درخواست ضمانت خارج کردی فاضل بنچ نے نویدصادق کی درخواست ضمانت کی سماعت شروع کی تو اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذار ایک غریب مزور ہے،اور کسی قسم کی غیر قانونی سر گرمیوں میں ملوث نہیں درخواست گذار ٹور کمپنی کا منیجر تھا،اور اس نے لوگوں سے حج کے نام پر پیسے نہیں لیے، جبکہ نیب کے سینئرپراسیکیوٹرعظیم داد نے عدالت کو بتایا کہ ملزم نویدصادق نے 2008میں عبدالعقیل کے ساتھ مل کرحاجیوں کو لوٹاہے عبدالعقیل کو سزا ہوئی جبکہ نوید صادق 2008سے مفرورتھا انہوں نے عدالت کو مزید بتایا کہ ملزم نے کرسٹینا نامی انگریز خاتون کے ساتھ مل کر حاجیوں کولوٹا، جس پرجسٹس اشتیاق ابراہیم نے استفسارکیاکہ کرسٹینا کا حاجیوں کے کوٹے سے کیا کام ہے نیب کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ کرسٹینا نے اپنے آپ کو اقوام متحدہ کا سفیر ظاہرکیا اور کہا کہ اسکے پاس حج کوٹہ ہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے دونوں جانب سے دلائل مکمل ہونے پر ضمانت کی درخواست خارج کردی۔
درخواست خارج

© Copyright 2019. All right Reserved