10:38 am
 آزاد کشمیر میں سب سے زیادہ ٹیکس دینے والا ضلع میر پور ہے، شبیر احمد جنجوعہ

آزاد کشمیر میں سب سے زیادہ ٹیکس دینے والا ضلع میر پور ہے، شبیر احمد جنجوعہ

10:38 am

میرپور(سٹاف رپورٹر)جموں کشمیر محاذ رائے شماری کے سٹی صدر شبیر احمد جنجوعہ نے کہا ہے کہ آزاد کشمیر میں سب سے زیادہ ٹیکس اور قومی آمدن دینے والا ضلع میر پور ہے لیکن ترقیاتی بجٹ اور اس کے مسائل حل کرنے کے لئے فنڈز میں اسے ہمیشہ نہ صرف نظر انداز کیا جاتا ہے بلکہ دانستہ اس کو پسماندہ رکھنے کی کوششیں کی جاتی ہیں انہوں نے کہا اس وقت پاکستان کی 35% بجلی صرف منگلا ڈیم میرپورسے پوری کی جاتی ہے جب کہ دیگر
ذرائع نیلم جہلم پراجیکٹ کی تعمیر کا ٹیکس بھی سب سے زیادہ میرپور سے وصول کیا جاتا ہے لیکن اس کی بجلی آزاد کشمیر کے عوام کو نہیں دی جا رہی گلپور،ہو لاڑ،دیامیر،ہٹیاںکے بعد اب کوہالہ پراجیکٹ جو منگلا ڈیم کے لگ بھگ گیارہ سو میگا واٹ بجلی پیدا کرے گا ان تمام پراجیکٹس میں سے آزاد کشمیر کے عوام کو نہ بجلی دینے کا کوئی منصوبہ ہے اور نہ ہی جو دی جا رہی ہے اس کو مفت تو درکنارسستا بھی نہیں کیا جا رہا انہوں نے کہا انہی مسائل سے جو دانستہ حکومت پاکستان پیدا کر رہی ہے کی بنیاد پر وہ کشمیری قیادت پر اعتماد نہیں کر تی مسٹر جنجوعہ نے کہا اس وقت علامہ اقبال روڈ اور ہال روڈ بالکل ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں جن پر صحت مند شہری پیدل تو کیا گاڑی اور رکشہ پر بھی سفر نہیں کر سکتا جب کہ دیگر پورے شہر کی سڑکیں ،ملحقہ گلیاں اور رابطہ راستے شکستہ حالت میں ہیں ،نیا اور پرانا انڈسٹریل ایریا جس میں بڑے بڑے ٹریلے بھی آتے ہیں لیکن سڑکوں کی خستہ حالی سے موقع پر ہی ٹوٹ جاتے ہیں انہوں نے کہا شہر بھر میں سیوریج لائینیں بند پڑی ہیں اور ان کے مین ہول کھلے ہوئے ہیں جن میں کئی بڑے بڑے جان لیوا حادثات ہو چکے ہیں ان کو کھولنے کی طرف کوئی توجہ نہیں دے رہا جب کہ پینے کا پانی حفظان صحت کے اصولوں کے بالکل منافی ہے لیکن عوام کو بیمار کرنے کے لئے یہی پانی دیا جاتا ہے وہ بھی ضرورت سے کہیں کم ہوتاہے محاذ کے سٹی صدر نے کہا میرپور کی درباروں سے حاصل ہونے والی آمدن بھی ہیڈ آفس میں چلی جاتی ہیں ان میں سے مقامی سطح پر ایک پیسہ بھی خرچ نہیں ہوتا جب کہ غیر ریاستی بنکوں میں آزاد کشمیر کے کھربوں روپے جن میں زیادہ تر میر پور کے عوام کے ہوتے ہیں بنکنگ اصولوں کے مطابق بھی ان کی آمدن سے میرپور اور آزاد کشمیر میں کوئی ترقیاتی کام یا ضر وریات زندگی کے لئے عوام پر خرچ نہیں کیا جا تا ۔